گاڑیاں خریدنے کے رجحان میں اضافہ، اپریل میں آٹو فنانسنگ کیلئے 293 ارب کے قرضے جاری

اپریل 2020ء کے مقابلہ میں اپریل 2021ء کے دوران آٹو فنانسنگ کیلئے قرض فراہمی میں 78 ارب روپے یعنی 36.4 فیصد کا نمایاں اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے، سٹیٹ بینک

291

اسلام آباد: پاکستان میں گاڑیوں کی خریداری (آٹو فنانسنگ) کیلئے مختلف بینکوں اور مالیاتی اداروں کی جانب سے قرضوں کی فراہمی میں اپریل 2021ء کے دوران 36 فیصد سے زائد اضافہ ہوا ہے۔

سٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی) کی رپورٹ کے مطابق اپریل 2021ء کے دوران آٹو فنانسنگ کی مد میں مجموعی طور پر 293 ارب روپے کے قرضے فراہم کئے گئے جبکہ اپریل 2020ء کے دوران اس مد میں فراہم کردہ قرضوں کا حجم 215 ارب روپے رہا تھا۔

اس طرح اپریل 2020ء کے مقابلہ میں اپریل 2021ء کے دوران آٹو فنانسنگ کیلئے قرض فراہمی میں 78 ارب روپے یعنی 36.4 فیصد کا نمایاں اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق ماہانہ بنیادوں پر مارچ 2021ء کے مقابلہ میں اپریل 2021ء کے دوران گاڑیوں کی خریداری کے لئے قرضوں کی فراہمی میں 2.8 فیصد اضافہ ہوا ہے۔

یہ بھی پڑھیے:

پاکستان میں کاریں بنانے والی تین بڑی کمپنیوں نے 8 سالوں میں کتنا ٹیکس دیا؟

رواں سال ایک ہزار سی سی سے کم پاور کی کتنے ہزار گاڑیاں فروخت ہوئیں؟

آٹو سیکٹر میں تیزی، 9 ماہ میں 14 لاکھ سے زائد موٹرسائیکل، ایک لاکھ سے زائد کاریں فروخت

واضح رہے کہ مارچ 2021ء کے دوران آٹو فنانسنگ کا حجم 285 ارب روپے تھا جو اپریل 2021ء میں 8 ارب روپے کے اضافہ سے 293 ارب روپے تک بڑھ گیا۔

واضح رہے کہ سٹیٹ بینک آف پاکستان کی جانب سے پالیسی ریٹ میں کمی کے نتیجہ میں آٹو فنانسنگ میں نمایاں اضافہ ہوا ہے۔

گاڑیاں تیار کرنے والے اداروں کی تنظیم پاکستان آٹوموٹیو مینوفیکچررز ایسوسی ایشن (پاما) کی رپورٹ کے مطابق رواں مالی سال کے پہلے دس ماہ (جولائی تا اپریل) کے دوران آٹو موبائلز (کاروں) کی فروخت میں 54 فیصد اضافہ ہوا۔

جولائی 2020ء سے لے کر اپریل 2021ء کے دوران پاکستان میں مجموعی طور پر ایک لاکھ 51 ہزار 178 چھوٹی بڑی گاڑیاں فروخت ہوئی جبکہ گزشتہ مالی سال 2019-20ء کی اسی مدت میں 97 ہزار 900 یونٹس فروخت ریکارڈ کی گئی تھی۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here