غیرقانونی سگریٹ کا کاروبار، دو ماہ میں کروڑوں روپے کی ٹیکس چوری پکڑی گئی

جولائی اور اگست 2021ء کے دوران  ایف بی آر کے اِن لینڈ ریونیو انفورسمنٹ نیٹ ورک نے 4 کروڑ 85 لاکھ 37 ہزار روپے مالیت کے 2 کروڑ 60 لاکھ 30 ہزار سگریٹ ضبط کیے جن پر 4 کروڑ 47 لاکھ 86 ہزار 258 روپے کی ٹیکس چوری کی گئی تھی

99

اسلام آباد: فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) نے رواں مالی سال کے ابتدائی دو ماہ میں مجموعی طور پر 4 کروڑ 85 لاکھ 37 ہزار 140 روپے مالیت کے 2 کروڑ 60 لاکھ 30 ہزار 500 سگریٹ ضبط کیے جن پر 4 کروڑ 47 لاکھ 86 ہزار 258 روپے کی ٹیکس چوری کی گئی تھی۔

ایف بی آر کے جاری کردہ اعلامیہ کے مطابق اِن لینڈ ریونیو انفورسمنٹ نیٹ ورک (آئی آر ای این) نے اگست 2021ء میں انسدادِ ٹیکس چوری آپریشن کے دوران 3 کروڑ 7 لاکھ 41 ہزار روپے مالیت کے بغیر ڈیوٹی ایک کروڑ 47 لاکھ 98 ہزار سگریٹ ضبط کیے جس کے نتیجے میں 2 کروڑ 61 لاکھ 84 ہزار روپے مالیت کے ٹیکسوں اور ڈیوٹیز کی چوری کی نشاندہی ہوئی۔

اِن لینڈ ریونیو انفورسمنٹ نیٹ ورک کی جانب سے وزیراعظم کی خصوصی ہدایات پر بغیر ڈیوٹی و ٹیکس ادا شدہ، جعلی سگریٹوں کی غیرقانونی فروخت کے خاتمے کے لئے یہ آپریشن ملک بھر میں جاری ہے۔

خیال رہے کہ اِن لینڈ ریونیو انفورسمنٹ نیٹ ورک کا قیام ستمبر 2019ء میں عمل میں آیا تھا جس میں چیف کوآرڈی نیٹر کے علاوہ سنٹرل فیلڈ کوآرڈی نیٹر اور پاکستان بھر میں ریجنل انفورسمنٹ کے سات مراکز شامل ہیں جنہیں جعلی اور بغیر ڈیوٹی اداہ شدہ سگریٹوں کی فروخت کے خلاف چھاپے مارنے اور انہیں قبضے میں لینے کی ذمہ داری سونپی گئی ہے۔

ملک بھر میں سگریٹوں کی غیرقانونی فروخت کے خلاف جاری اس کریک ڈاؤن کے تحت اِن لینڈ ریونیو انفورسمنٹ نیٹ ورک کے تمام مراکز نے قومی خزانے کو پہنچنے والے نقصان پر قابو پانے کے لئے بغیر ڈیوٹی ادا شدہ اور جعلی سگریٹ کا کاروبار کرنے والوں کے خلاف بلاامتیاز کارروائیاں تیز کر دی ہیں۔

چیئرمین ایف بی آر ڈاکٹر محمد اشفاق احمد نے اِن لینڈ ریونیو انفورسمنٹ نیٹ ورک کے عملے کی کارکردگی کو سراہا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ یکم نومبر 2021ء سے ٹریک اینڈ ٹریس سسٹم متعارف کرایا جا رہا ہے اور ملک بھر میں سگریٹ کی تیاری کی سرگرمیاں اس کے دائرے میں شامل ہوں گی۔

انہوں نے مزید بتایا کہ آزاد کشمیر حکومت نے بھی سگریٹ کے کارخانوں کو ٹریک اینڈ ٹریس سسٹم کے دائرے میں لانے کے لئے فیڈرل بورڈ آف ریونیو سے رابطہ کیا ہے، توقع ہے کہ آئندہ چند ماہ کے اندر ٹریک اینڈ ٹریس سسٹم پر کام مکمل کر لیا جائے گا اور یہ سسٹم آزاد کشمیر میں بھی کام شروع کر دے گا اور اس کے ساتھ ساتھ اِن لینڈ ریونیو انفورسمنٹ نیٹ ورک کی دلیرانہ مہم کی بدولت جعلی، غیرقانونی اور بغیر ٹیکس اداہ سگریٹوں کی لعنت پر قابو پانے میں بھرپور مدد ملے گی۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here