کیپٹل مارکیٹ مشاورتی کونسل کا پہلا اجلاس، اصلاحاتی ایجنڈے پر غور

وزیر خزانہ شوکت ترین کی کیپٹل مارکیٹ مشاورتی کونسل کے ٹرمز آف ریفرنس کے سہل نفاذ کیلئے رابطہ کمیٹی کے قیام اور اس میں ایس ای سی پی، سٹیٹ بینک، پاکستان بینکنگ کونسل، کمرشل مارکیٹس، لیگل کونسل اور اسلامی بینکاری کے نمائندوں کو شامل کرنے کی ہدایت

129

اسلام آباد: وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین کی زیر صدارت کیپٹل مارکیٹ مشاورتی کونسل کے پہلے اجلاس میں اصلاحاتی ایجنڈے پر غوروخوص کیا گیا تاکہ محدود وسائل کے حامل سرمایہ کاروں کو کیپٹل مارکیٹس کی طرف راغب کرنے کیلئے اقدامات کیے جا سکیں۔

کیپٹل مارکیٹ مشاورتی کونسل کا قیام کیپٹل مارکیٹ ڈویلپمنٹ پلان کے تحت اپریل 2020ء میں عمل میں لایا گیا تھا جس کے بعد کونسل کا پہلا اجلاس وزیر خزانہ کی زیر صدارت ایک سال سے زائد عرصے بعد 19 جولائی 2021ء کو منعقد ہوا۔

کونسل کے پہلے اجلاس میں وزیرخزانہ شوکت ترین نے کہا کہ کونسل کے قیام کی ضرورت طویل عرصہ سے محسوس کی جا رہی تھی کیونکہ کیپٹل مارکیٹس رسک شئیرنگ میں بہتری لا سکتی ہیں اور ان کی استعداد اور کارگردگی میں بہتری سے سرمایہ کو حقیقی معیشت کیلئے مختص کیا جا سکتا ہے۔

وزیر خزانہ نے کہا کونسل کے قیام کا ایک اور مقصد سرمایہ کاروں بالخصوص محدود وسائل کے حامل سرمایہ کاروں کو راغب کرنا ہے، ایسے سرمایہ کار کیپٹل مارکیٹ میں اپنے محدود وسائل لا کر اسے زیادہ پیداواری بنا سکتے ہیں، اصلاحات تمام متعلقہ فریقوں کی مکمل مشاورت سے متعارف کرائے جائیں گے۔ اصلاحات کے نتیجہ میں اقتصادی نمو اور ترقی میں تیزی آئے گی۔

وزیر خزانہ نے کیپٹل مارکیٹ مشاورتی کونسل کے ٹرمز آف ریفرنس کے سہل نفاذ کیلئے رابطہ کمیٹی کے قیام اور اس میں سکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان، سٹیٹ بینک، پاکستان بینکنگ کونسل، کمرشل مارکیٹس، لیگل کونسل اور اسلامی بینکاری کے نمائندوں کو شامل کرنے کی ہدایت کی تاکہ تمام متعلقہ فریقوں کی طرف سے جامع رائے کا حصول ممکن ہو سکے۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ ایس ای سی پی کو ہی رابطہ کمیٹی کا سیکرٹریٹ بنایا جائے گا اور چیئرمین ایس ای سی پی اس کمیٹی کے کے سربراہ یا سیکرٹری کے طور پر اپنا کردار ادا کریں گے۔

اجلاس میں اس بات پر اتفاق کیا گیا کہ رابطہ کمیٹی کا اجلاس ماہوار بنیادوں پر ہو گا اور اجلاس میں پیش کردہ سفارشات کو کونسل کی ایپکس کمیٹی میں جائزہ کیلئے پیش کیا جائے گا۔ ایپکس کمیٹی حتمی نفاذ کیلئے ایس ای سی پی اور متعلقہ شراکت داروں کو ہدایات جاری کرے گی۔

اجلاس میں وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے محصولات ڈاکٹر وقار مسعود، سیکرٹری خزانہ، چیئرمین سیکورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن عامر خان، چئیرمین ایچ بی ایل سلطان علی الانہ اور دیگر اعلیٰ حکام نے شرکت کی، گورنرسٹیٹ بینک ویڈیو لنک کے ذریعہ اجلاس میں شریک ہوئے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here