ہنگری کی 17 کمپنیاں پاکستان میں شراکت داری اور سرمایہ کاری کی خواہاں

ہنگری کے وزیر خارجہ کا دورہ اسلام آباد، پاکستانی طلباء کو 200 وظائف فراہم کرنے کے معاہدہ پر دستخط، دونوں ملکوں میں براہ راست پروازوں، جی ایس پی پلس کے حوالے سے پاکستان کی حمایت کا اعلان

214
اسلام آباد: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی پاکستان کے دورے پر آئے ہنگری کے وزیر خارجہ و تجارت پیٹر سجارتو سے ملاقات کر رہے ہیں (پی آئی ڈی)

اسلام آباد: ہنگری کی 17 کمپنیوں نے پاکستانی کمپنیوں کے ساتھ شراکت داری اور سرمایہ کاری میں دلچسپی کا اظہار کیا ہے جبکہ ہنگرین حکومت اپنی یونیورسٹیوں میں اعلیٰ تعلیم کیلئے پاکستانی طلباء کو 200 وظائف فراہم کرے گی۔

جمعہ کو ہنگری کے وزیر خارجہ و تجارت پیٹر سجارتو پاکستان کے دورے پر اسلام آباد پہنچے جہاں انہوں نے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی ملاقات کی اور کاروباری برادری سے خطاب کیا۔

اپنے پاکستانی ہم منصب کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ہنگری کے وزیر خارجہ نے کہا کہ ہمیں خطے میں پاکستان کے مستحکم کردار کی ضرورت ہے، نیٹو کے انخلاء کے بعد افغانستان کو ایک بار پھر دہشت گردوں کی محفوظ پناہ گاہ نہیں بننے دینا چاہئے۔ انہوں نے امریکہ اور طالبان کے مابین دوحہ امن معاہدے میں پاکستان کے اہم کردار کو بھی تسلیم کیا۔

ہنگری کے وزیر خارجہ نے کہا کہ دونوں ممالک نے ہنگری کی یونیورسٹیوں میں پاکستانی طلبا کے لئے 200 وظائف جاری رکھنے کے لئے معاہدے پر دستخط کیے ہیں۔ ہنگری کی فوڈ، ٹیکنالوجی، میڈیکل اور آئی ٹی کمپنیاں پاکستان میں سرمایہ کاری کا ارادہ رکھتی ہیں اور ان کا ملک یورپی یونین میں پاکستان کے جی ایس پی پلس سٹیٹس کی حمایت کرتا رہے گا۔

اسلام آباد: وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود اور ہنگری کے وزیر خارجہ پیٹر سجارتو تعلیمی شعبے میں تعاون کی یادداشت پر دستخط کر رہے ہیں (پی آئی ڈی)

اس موقع پر وزیر خارجہ قریشی نے کہا کہ ہنگری کی 17 کمپنیوں نے پاکستان کا دورہ کیا ہے اور پاکستانی کمپنیوں کے ساتھ مختلف شعبوں میں شراکت داری کو فروغ دینے میں دلچسپی کا اظہار کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ آج ہم نے ڈیری کی پیداوار اور سائبر سیکیورٹی سمیت متعدد معاہدوں پر دستخط کیے ہیں، دونوں ملکوں کے مابین سیاسی مشاورت کا اگلا دور ہنگری کے دارالحکومت بڈاپسٹ میں ہو گا۔ پاکستان ہنگری کے ساتھ دو طرفہ تعلقات کو خصوصی اہمیت دیتا ہے۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ہنگری کے وزیر خارجہ نے پاکستان میں کاروباری کمپنیوں کو کاروبار کیلئے 84 ملین ڈالر کریڈٹ لائن دینے کا اعلان کیا ہے۔ وزیر خارجہ نے توقع ظاہر کی کہ اس وفد کی بزنس ٹو بزنس میٹنگز کے انتہائی حوصلہ افزاء نتائج سامنے آئیں گے۔

انہوں نے ہنگری اور پاکستان کے مابین براہ راست پروازوں کے اعلان اور جی ایس پی پلس کے حوالے سے پاکستان کی حمایت پر وزیر خارجہ سجارتو کا شکریہ ادا کیا۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ ایف اے ٹی ایف پر ہماری سوچ میں ہم آہنگی پائی جاتی ہے، وہ اس بات سے متفق ہیں کہ ایف اے ٹی ایف کو سیاسی مقاصد کیلئے استعمال نہیں ہونا چاہیے، ہم نے باہمی دلچسپی کے شعبوں بالخصوص معیشت، تجارت، عوام کی سطح پر روابط اور بین الاقوامی فورمز پر باہمی دلچسپی کے امور پر بھی ایک دوسرے کے ساتھ تعاون کے فروغ پر اتفاق کیا ہے۔

قبل ازیں وزارت خارجہ میں پاکستان اور ہنگری کے مابین شعبہ تعلیم میں معاونت کے حوالے سے معاہدہ پر دستخط کیے گئے، معاہدے کے تحت ہنگرین حکومت اپنی یونیورسٹیوں میں اعلیٰ تعلیم کیلئے پاکستانی طلباء کو 200 وظائف فراہم کرے گی۔

وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کی موجودگی میں معاہدے کی مفاہمتی یادداشت پر پاکستان کی جانب سے وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود اور ہنگری کی جانب سے وزیر خارجہ پیٹر سجارتو نے دستخط کئے۔

واضح رہے کہ ہنگری 2016ء سے ہائیر ایجوکیشن کمیشن کے ذریعے پاکستانی طلباء کو ہنگری میں اعلیٰ تعلیم کیلئے وظائف مہیا کر رہا ہے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here