برآمدکنندگان کو آسانی فراہم کرنے کیلئے ایف بی آر نے نئی سہولت متعارف کروا دی

فیڈرل بورڈ آف ریونیو کے اس اقدام سے چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروبار کو برآمدات میں درپیش مسائل حل ہوں گے جس کی وجہ سے پاکستان کی عالمی بینک کے تجارتی آسانی کے انڈیکس میں بہتری آئے گی

204

اسلام آباد: فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) نے آن لائن ایکسپورٹ سہولتی سیکم آتھورائزیشن ایپلی کیشن کیلئے وی بوک نظام میں نیا موڈیول متعارف کرا دیا۔

اس سہولت سے مستفید ہونے کے لئے ایکسپورٹرز کو وی بوک نظام میں رجسٹرڈ ہونا پڑے گا جس کیلئے وی بوک سسٹم میں ’ایکسپورٹ سہولتی سکیم/ایکسپورٹ اورینٹڈ یونٹ/مینوفیکچرنگ بانڈ‘ کے نام سے متعارف کرایا گیا ہے۔

لائسنس ایپلی کیشن وی بوک نظام میں دستیاب ہے جسے تاجروں اور برآمدکنندگان کی جانب سے آن لائن داخل کرنا ہو گا۔ آن لائن ایکسپورٹ سہولتی سکیم ایپلی کیشن متعلقہ کسٹمز فارمیشن کو بھیجی جائے گی جہاں ابتدائی جانچ پڑتال کے بعد اس کو مزید پراسیس کرنے کے لئے ریگیولیٹری اتھارٹی کو بھیجا جائے گا۔

لائسنس کی عبوری اور حتمی منظوری کے لیے آئی او سی او یا ایکسپورٹ ڈویلپمنٹ بورڈ (ای ڈی بی) کو کیس بھیجا جائے گا جو جائزہ سرٹیفیکیٹ جاری کریں گے اور اس سلسلے میں تاجر یا برآمدکنندہ کو بھی آگاہ کریں گے۔

وی بوک نظام میں ایک اور فیچر کا اضافہ کیا گیا ہے جس کے تحت تاجر کامن ایکسپورٹ ہاؤس کے لائسینس کے لئے آن لائن درخواست دے سکتے ہیں۔

کامن ایکسپورٹ ہاؤس چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروبار اور بالواسطہ یا بلاواسطہ برآمدکنندگان کو خام مال فروخت کرنے کی سہولت فراہم کرے گا۔

چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروبار سے منسلک تاجر، برآمدکنندگان، کسٹمز ایجنٹس اور وزارت تجارت نے اس اقدام کی تعریف کی ہے جس پر عمل درآمد سے پاکستان کی صنعت اور برآمدات کو فروغ ملے گا، روزگار کے مواقع اور زر مبادلہ میسر آئے گا۔

ایکسپورٹ سہولتی سکیم موڈیول کے متعارف کئے جانے سے پاکستان نے تجارتی سہولتی معاہدہ 2017ء کے تحت ایک اہم سنگ میل حاصل کر لیا ہے۔

اس اقدام سے چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروبار کو برآمدات میں درپیش مسائل حل ہوں گے جس کی وجہ سے پاکستان کی عالمی بینک کے تجارتی آسانی کے انڈیکس اور بین الاقوامی تجارتی انڈیکس میں بہتری آئے گی۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here