’نادرا کے 39 ملازمین ایجنٹ مافیا کے ساتھ ملی بھگت پر معطل‘

قومی ادارہ میں ناقص کارگرگی، بدعنوانی اور کرپشن کرنے والے کو برداشت نہیں کیا جائے گا، چیئرمین نادرا

250

اسلام آباد: نیشنل ڈیٹابیس اینڈ رجسٹریشن اتھارٹی (نادرا) کے چیئرمین طارق ملک نے کہا ہے کہ ناقص کارگرگی اور بدعنوانی کرنے والے عناصر کو برداشت نہیں کیا جائے گا، 39 ملازمین کو ایجنٹ مافیا کے ساتھ ملی بھگت اور خواتین کے ساتھ ناروا سلوک روا رکھنے پر معطل کیا گیا ہے۔

چیئرمین نادرا نے ہفتے کو کراچی میں ریجنل ہیڈ آفس سمیت مختلف نادرا دفاتر کا ہنگامی دورہ کیا، اس حوالے سے جاری اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ طارق ملک نے کراچی میں نادرا دفاتر کی کارکردگی بہتر بنانے کے لئے مجوزہ اقدامات کا جائزہ لیا اور سائلین کے مسائل دریافت کرکے موقع پر حل کرنے کے احکامات جاری کئے۔

اپنے پہلے دورہ پر چیئرمین نادرا نے ملازمین سے ان کی کارکردگی کے حوالے سے بھی بات چیت کی۔ انہوں نے شاہراہ قائدین نادرا دفتر کے انتظامات کو سراہا جس کی انچارج ایک خاتون اسسٹنٹ ڈائریکٹر رضوانہ خلیل ہیں۔

یہ بھی پڑھیےطارق ملک چیئرمین نادرا تعینات، ’20 ہزار ڈالر تنخواہ کی خبر بے بنیاد ہے‘

طارق ملک نے نادرا میں ترجیحی بنیادوں پر خواتین کو نوکریاں دینے اور روزگار کی فراہمی میں خواتین کی شمولیت کو یقینی بنانے کے عزم کا بھی اعادہ کیا۔

ریجنل ہیڈ آفس کراچی میں نادرا ملازمین سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ 39 ملازمین کو ایجنٹ مافیا کے ساتھ ملی بھگت اور خواتین کے ساتھ ناروا سلوک روا رکھنے پر معطل کیا گیا ہے، بدعنوان عناصر کو قوائد و ضوابط کے مطابق سزا دی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ قومی ادارہ میں ناقص کارگرگی، بدعنوانی اور کرپشن کرنے والوں کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔ ادارے کے محدود وسائل کے باوجود بلاتفریق تنخواہیں بڑھا کر ملازمین کے بہترین مفاد کو یقینی بنایا جا رہا ہے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here