کابینہ اجلاس: چھوٹی گاڑیوں پر ایڈیشنل کسٹمز ڈیوٹی ختم، وزراء کے پروٹوکول کا ازسرنو جائزہ لینے کی ہدایت

ایک ہزار سی سی سے زیادہ پاور کی گاڑیوں پر ایڈیشنل کسٹم ڈیوٹی 7 فیصد سے کم کر کے 2 فیصد کر دی گئی، ملازمتوں کیلئے شفاف ٹیسٹنگ نظام وضع کرنے کیلئے کمیٹی تشکیل، ایڈیشنل کسٹم ڈیوٹی کے حوالے سے نیشنل ٹیرف پالیسی بورڈ کے فیصلوں کی منظوری

604

اسلام آباد: وفاقی کابینہ نے نے مقامی طور پر تیار شدہ گاڑیوں ( ایک ہزار سی سی اور کم) پر ایڈیشنل کسٹم ڈیوٹی ختم کرنے جبکہ ایک ہزار سی سی سے اوپر والی گاڑیوں پر ایڈیشنل کسٹم ڈیوٹی 7 فیصد سے کم کر کے 2 فیصد کرنے کی منظوری دے دی۔

منگل کو وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں متعدد امور پر تبادلہ خیال کیا گیا اور کئی اہم فیصلوں کی منظوری دی گئی۔

کابینہ نے بجٹ کی تیاری کے دوران ٹیرف کے ضمن میں آنے والی بے قاعدگیوں کو دور کرنے کے لئے مختلف اشیاپر لاگو ریگولیٹری ڈیوٹی اور ایڈیشنل کسٹم ڈیوٹی کے حوالے سے نیشنل ٹیرف پالیسی بورڈ کے فیصلوں کی منظوری دی۔

کابینہ نے مقامی طور پر تیار شدہ ایک ہزار سی سی اور اس سے کم پاور کی گاڑیوں پر ایڈیشنل کسٹم ڈیوٹی ختم کر دی جبکہ ایک ہزار سی سی سے زائد پاور کی گاڑیوں پر ایڈیشنل کسٹم ڈیوٹی سات فیصد سے کم کر کے دو فیصد کرنے کی منظوری دے دی۔

کابینہ نے آٹو انڈسٹری کے حوالے سے بقیہ تین تجاویز پر فیصلے ایک ہفتے کے لئے موخر کر دیئے، اس حوالے سے وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے بتایا کہ عوام کو آٹو پالیسی کے حوالے سے جلد خوشخبری ملے گی، چھوٹی گاڑیوں کی قیمتوں میں نمایاں کمی آئے گی۔

کابینہ اجلاس میں الیکٹرانک ووٹنگ مشین کے حوالے سے بریفنگ دیتے ہوئے وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی شبلی فراز نے اب تک کی پیشرفت سے آگاہ کیا۔

کابینہ کو بتایا گیا کہ 15 جولائی تک الیکٹرانک ووٹنگ مشین مکمل طور پر تیار کر لی جائے گی۔ مشیر برائے پارلیمانی امور نے الیکٹرانک ووٹنگ اور اوورسیز پاکستانیوں کو ووٹنگ کا اختیار دینے کے حوالے سے پیشرفت سے آگاہ کیا۔

وفاقی کابینہ کو گزشتہ اجلاسوں میں لئے گئے فیصلوں پر عمل درآمد کی رپورٹ پیش کی گئی، رپورٹ کے مطابق اب تک کابینہ کے 141 اجلاسوں میں تین ہزار 776 فیصلے لئے گئے، ان میں سے تین ہزار 44 فیصلوں (91 فیصد) پر عمل درآمد ہوا، 66 پر عمل درآمد جاری ہے، 123 پر عمل درآمد میں تاخیر ہوئی جبکہ 142 فیصلے مفاہمتی یادداشتوں اور معاہدوں سے متعلق ہیں، مختلف وزارتوں سے متعلق زیر التوا فیصلوں پر بھی غور کیا گیا۔

اجلاس میں وزیراعظم نے سول ایوی ایشن اتھارٹی کو سکردو اور گلگت ائیرپورٹس کو تمام موسموں کیلئے کارآمد بنانے کا منصوبہ مرتب کرنے کی ہدایت کی تاکہ سیاحت کو مزید فروغ دیا جا سکے۔

وزیراعظم نے ہوا بازی ڈویژن کو ہدایت کی کہ معذور افراد کو جہازوں میں اتارنے اور چڑھانے کے حوالے سے خصوصی انتظامات یقینی بنائے جائیں۔

کابینہ نے سرکاری ملازمتوں کے لئے شفاف ٹیسٹنگ نظام وضع کرنے کے لئے چار رکنی کمیٹی تشکیل دے دی۔ وزیراعظم نے ہدایت کی کہ اس حوالے سے نظام جلد وضع کیا جائے کیونکہ بہت سی ٹیسٹنگ سروسز معیار کے مطابق نہیں۔

کابینہ نے چیئرمین کیپٹل ڈویلپمنٹ اتھارٹی (سی ڈی اے) کو ہدایت کی کہ آئندہ اجلاس میں گرین ایریاز کے تحفظ اور وفاقی دارالحکومت میں تجاوزات کے خاتمے کے حوالے سے بریفنگ دی جائے۔

وفاقی وزراء، وزرائے مملکت و دیگر اہم شخصیات کے پروٹوکول اور سیکورٹی کے حوالے سے وزیراعظم نے ہدایت کی کہ سیکورٹی ضروریات کا از سرنو جائزہ لیا جائے اور ان ضروریات کو مدنظر رکھتے ہوئے ان کو سیکورٹی فراہم کی جائے گی اور اسی تناظر میں موبائل سکواڈ کو ساتھ چلنے کی اجازت دی جائے گی۔

وزیراعظم نے یہ ہدایت بھی کی کہ گاڑی پر جھنڈا لہرانے کے نظام کا بھی از سر نو جائزہ لیا جائے اور کابینہ کے آئندہ اجلاس میں اس حوالے سے تفصیلی پالیسی پیش کی جائے۔

کابینہ نے پاکستان سول ایوی ایشن اتھارٹی آرڈیننس 2021ء اور پاکستان ایئر پورٹس اتھارٹی آرڈیننس 2021ء کی منظوری دے دی، ان قوانین کا مقصد سول ایوی ایشن کی ریگولیٹری ذمہ داریوں اور ایئر پورٹس پر سروسز کی فراہمی کے شعبوں کو علیحدہ کرنا ہے تاکہ ان دونوں شعبوں میں بہتری لائی جا سکے۔

سیکورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان (ایس ای سی پی) کے حوالے سے 30 جون 2021ء کو اختتام پذیر مالی سال کے لئے آر ایس ایم اویس حیدر اور لیاقت نعمان چارٹرڈ اکائونٹنٹس کو مقرر کرنے کی منظوری دی گئی۔

کابینہ نے ہدایت کی سابقہ قبائلی علاقوں میں تھری جی فور جی کی فراہمی کے لئے ترجیحی بنیادوں پر اقدامات اٹھائے جائیں، کسی بھی سیکورٹی کی صورت حال کے بارے میں فوری طور پر آگاہ کیا جائے۔ ان علاقوں میں تھری جی اور فور جی کی سہولت وہاں کے مکینوں کا بنیادی حق ہے۔

مجوزہ اسلام آباد کیپیٹل ٹیریٹری سیف سٹی اتھارٹی ایکٹ 2021ء، اسلام آباد کیپیٹل ٹیریٹری مینٹیننس آف پبلک آرڈر ایکٹ 2019ء، اسلام آباد کیپیٹل ٹیریٹری سیکورٹی آف ولنر ایبل اسٹیبلشمنٹس ایکٹ 2019ء، اسلام آباد کیپیٹل ٹیریٹری سائونڈ سسٹم (ریگولیشن) ایکٹ 2019ء اور مجوزہ اسلام آباد کیپیٹل ٹیریٹری انفارمیشن آف ٹمپریری ریذیڈنٹس ایکٹ 2019ء پر غور کرتے ہوئے کابینہ کمیٹی برائے قانون سازی کو بھیجنے کی منظوری دی۔

کابینہ نے پیمرا کونسل آف کمپلینٹس بلوچستان کے ممبران کی تعیناتی کی منظوری دی، سحر زرین بندیال کو کونسل آف کمپلینٹس لاہور میں تعینات کر دیا گیا۔ سی ای او پاکستان جیم اینڈ جیولری ڈویلپمنٹ کمپنی کی تعیناتی کا ایجنڈا موخر کر دیا گیا۔

کابینہ نے کونویڈیشیا نامی کورونا ویکسین کی ریٹیل پرائس 12 ہزار 168 روپے مقرر کرنے کی منظوری دے دی۔

کابینہ اجلاس میں وزیر برائے مذہبی امور نے تجویز پیش کی کہ اسلام آباد کے مدارس اور مساجد کے آئمہ کرام کو بھی خیبر پختونخوا کی طرز پر مشاہرے اور ان کی تربیت کا انتظام کیا جائے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here