پاکستان کا تجارتی خسارہ 20 ارب ڈالر سے تجاوز کر گیا

جولائی 2020ء سے مارچ 2021ء تک برآمدات 18 ارب 68 کروڑ ڈالر جبکہ درآمدات 39 ارب 51 کروڑ ڈالر ریکارڈ کی گئیں: پی بی ایس

458

اسلام آباد: جاری مالی سال کی پہلی تین سہ ماہیوں (جولائی 2020ء تا مارچ 2021ء) کے دوران گزشتہ مالی سال کے مقابلہ میں ملکی برآمدات میں 7.14 فیصد اضافہ ہوا تاہم اس مدت میں پاکستان کے تجارتی خسارہ میں گزشتہ مالی سال کے مقابلہ میں 20 فیصد کا نمایاں اضافہ بھی ہوا ہے۔

پاکستان بیورو برائے شماریات (بی پی ایس) کی طرف سے جاری کردہ اعدادوشمار کے مطابق جاری مالی سال کے پہلے 9 ماہ میں پاکستان کی برآمدات کا مجموعی حجم 18 ارب 68 کروڑ ڈالر ریکارڈ کیا گیا۔

یہ شرح گزشتہ مالی سال 2019-20ء کی پہلی تین سہ ماہیوں کی برآمدات کے مقابلہ میں 7.14 فیصد زیادہ ہے، گزشتہ مالی سال کی اسی مدت میں ملکی برآمدات کا حجم 17 ارب 44 کروڑ ڈالر ریکارڈ کیا گیا تھا۔

مارچ 2021ء میں پاکستان کی برآمدات کا حجم دو ارب 36 کروڑ 50 لاکھ ڈالر ریکارڈ کیا گیا جبکہ مارچ 2020ء کے دورن ایک ارب 81 کروڑ ڈالر کی برآمدات کی گئیں تھیں۔ ماہانہ بنیادوں پر مارچ 2021ء کے دوران ملکی برآمدات میں 30.66 فیصد اضافہ ہوا ہے۔

پاکستان بیورو برائے شماریات کے مطابق مالی سال کے پہلے 9 ماہ میں کورونا وبا اور کاروباری بندش کے باوجود پاکستان نے 39 ارب 51 کروڑ ڈالر کی درآمدات کی ہیں جو گزشتہ مالی سال کی اسی مدت کے مقابلہ میں 13.59 فیصد زیادہ ہیں۔

گزشتہ مالی سال 2019-20ء کے ابتدائی 9 ماہ کے دوران ملکی درآمدات کا حجم 34.79  ارب ڈالر ریکارڈ کیا گیا تھا۔

مارچ میں ملکی درآمدات میں 71 فیصد کا نمایاں اضافہ دیکھنے میں آیا، مارچ 2021ء میں ملکی درآمدات کا حجم پانچ ارب 66 کروڑ ڈالر ریکارڈ کیا گیا جبکہ مارچ 2020ء میں درآمدات پر پاکستان نے تین ارب 30 کروڑ 80 لاکھ ڈالر زرمبادلہ صرف کیا تھا۔

پی بی ایس کے اعدادوشمار کے مطابق جاری مالی سال کی پہلی تین سہ ماہیوں کے دوران برآمدات اور درآمدات میں نمایاں فرق کے باعث پاکستان کے تجارتی خسارہ میں 20.08 فیصد کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔

جاری مالی سال کی تین سہ ماہیوں میں ملکی تجارتی خسارہ کا حجم 20 ارب 83 کروڑ 10 لاکھ ڈالر ریکارڈ کیا گیا جبکہ گزشتہ مالی سال کی اسی مدت میں پاکستان کے تجارتی خسارہ کا حجم 17 ارب 34 کروڑ ڈالر ریکارڈ کیا گیا تھا۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here