پہلی ششماہی میں نشاط ملز کی آمدنی میں 6 فیصد کمی، شئیر کی قدر بھی گر گئی

212

اسلام آباد: رواں مالی سال کی پہلی ششماہی کے دوران نشاط ملز لمیٹد (این ایم ایل) کی بعد از ٹیکس آمدنی میں 6.2 فیصد کمی ہوئی ہے۔

نشاط ملز کی جانب سے پاکستان سٹاک ایکسچینج (پی ایس ایکس) کو جاری کردہ مالیاتی نتائج کے مطابق جاری مالی سال میں جولائی تا دسمبر 2020ء کے دوران کمپنی کی خالص آمدن ایک ارب 77 کروڑ 40 لاکھ روپے تک کم ہو گئی جبکہ گزشتہ مالی سال کی اسی مدت میں کمپنی کو ایک ارب 89 کروڑ 10 لاکھ روپے خالص آمدن ہوئی تھی۔

اس طرح گزشتہ مالی سال کے مقابلہ میں رواں مالی سال کے پہلے چھ ماہ کے دوران کمپنی کی بعد از ٹیکس آمدنی میں 11 کروڑ 70 لاکھ یعنی 6 فیصد سے زیادہ کمی ریکارڈ کی گئی ہے۔

مالیاتی رپورٹ کے مطابق نشاط ملز لمیٹڈ کی بعد از ٹیکس آمدنی میں کمی کے نتیجہ میں کمپنی کی فی حصص آمدن بھی 5.38 روپے کے مقابلہ میں 5.04 روپے فی حصص تک کم ہو گئی۔

مزید برآں گزشتہ مالی سال کے مقابلہ میں رواں مالی سال کی دوسری سہ ماہی میں اکتوبر تا دسمبر 2020ء کے دوران نشاط ملز لمیٹڈ کی خالص آمدنی میں 14.5 فیصد کمی واقع ہوئی ہے اور اسی عرصہ کے لئے کمپنی کا خالص منافع 82 کروڑ 70 لاکھ روپے تک کم ہو گیا۔

گزشتہ مالی سال میں اکتوبر تا دسمبر 2019ء تک کی مدت کے دوران نشاط ملز لمیٹڈ کو 96 کروڑ 80 لاکھ روپے بعد از ٹیکس آمدنی ہوئی تھی۔

واضح رہے کہ گزشتہ مالی سال کی دوسری سہ ماہی کے لئے کمپنی کی فی حصص آمدنی 2.75 روپے رہی تھی تاہم جاری مالی سال کے اسی عرصہ کے دوران نشاط ملز لمیٹڈ کی فی حصص آمدنی 2.35 روپے ریکارڈ کی گئی ہے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here