پاک روس گیس پائپ لائن معاہدے میں ترمیم کے پروٹوکولز کی منظوری 

وفاقی کابینہ کا اجلاس، پاکستان انسٹی ٹیوٹ آف ایجوکیشن ایکٹ کے مجوزہ قانون، انکم ٹیکس (دوسری ترمیم) بل2021ء کے مسودے، سٹیٹ اونڈ انٹر پرائزز (گورننس اینڈ آپریشنز) بل 2021ء کی بھی منظوری دے دی گئی

170

اسلام آباد: وفاقی کابینہ نے پاک روس گیس پائپ لائن معاہدے میں ترمیم کے پروٹوکولز کی منظوری دے دی۔

منگل کو وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس منعقد ہوا جس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات سینیٹر شبلی فراز نے بتایا کہ کابینہ کو اسلام آباد میٹرو بس پروجیکٹ پر بریفنگ دی گئی اور میٹرو بس منصوبے میں تاخیر کے امور کا جائزہ لیا گیا۔

کابینہ نے پاکستان انسٹی ٹیوٹ آف ایجوکیشن ایکٹ کے مجوزہ قانون کے مسودے کی اصولی طور پر منظوری دیتے ہوئے مسودہ کابینہ کمیٹی برائے قانون سازی کو بھجوانے کی سفارش کر دی۔

اس مجوزہ قانون کے تحت اکیڈمی آف ایجوکیشنل پلاننگ اینڈ مینجمنٹ اور نیشنل ایجوکیشن اسیسمنٹ سسٹم کا انضمام کرکے ایک جدید ادارے کا قیام عمل میں لایا جائے گا جو تعلیمی اداروں کا ڈیٹا بیس اور تعلیمی اداروں کے معاملات کو منظم کرنے میں ذمہ داریاں ادا کرے گا۔

یہ بھی پڑھیے:

ڈریپ کے سربراہ کو عہدے سے ہٹا دیا گیا

کابینہ نے سٹیٹ بینک کی انتظامی خودمختاری کا بل منظور کر لیا

اس کے ساتھ ساتھ سکولوں سے باہر بچوں کے حوالے سے کابینہ نے آﺅٹ آف سکول چلڈرن فریم ورک کی بھی منظوری دی۔ اس فریم ورک کے تحت ان تمام عوامل اور محرکات کا جائزہ لیا جا رہا ہے جس کے باعث بچے سکول نہیں جا پاتے، اس فریم ورک میں آﺅٹ آف سکول چلڈرن کو سکولوں میں واپس لانے کے لئے حکمت عملی بھی تجویز کی گئی ہے۔

وفاقی کابینہ نے مجوزہ انکم ٹیکس (دوسری ترمیم) بل 2021ء کے مسودے، سٹیٹ اونڈ انٹر پرائزز (گورننس اینڈآپریشنز) بل 2021ء کی منظوری دی جبکہ پاکستان اور روس کے درمیان نارتھ ساﺅتھ گیس پائپ لائن منصوبے کے حوالے سے معاہدے میں ترمیم کے پروٹوکولز کی منظوری بھی دے دی گئی۔

کابینہ نے نیپرا ٹریبیونل میں ممبر فنانس کے حوالے سے حکومت سندھ  کی جانب سے سفارش کردہ امیدواروں کی اہلیت و تجربے کو مدنظر رکھتے ہوئے پیش کی جانے والی تجویز سے اتفاق نہیں کیا۔

کابینہ نے فیڈرل میڈیکل ٹیچنگ انسٹی ٹیوٹس آرڈیننس کے تحت شیخ زید پوسٹ گریجویٹ میڈیکل انسٹی ٹیوٹ اور جناح پوسٹ گریجویٹ میڈیکل سنٹر کے بورڈ آف گورنرز کے ممبران کی تعیناتی کی منظوری دی۔

کابینہ نے اوورسیز ایمپلائمنٹ پروموٹرز لائسنسز کے حوالے سے 41 نئے لائسنسز کے اجراء، سات کی تنسیخ، پانچ کے تبادلے اور دائرہ کار کے ایک کیس کی منظوری دی۔ اجلاس میں بتایا گیا کہ بیورو آف امیگریشن اینڈ اوورسیز ایمپلائمنٹ کی جانب سے اب تک 11 لاکھ افراد کو بیرون ملک بھجوایا گیا ہے۔

‘کورونا سے ڈرنا نہیں لڑنا ہے’ کے حوالے سے لاہور ہائی کورٹ میں ایک شہری کی جانب سے دائر کردہ رٹ پٹیشن کے حوالے سے کابینہ نے اس رائے کا اظہار کیا چونکہ اس حوالے سے اسلامی نظریاتی کونسل کی واضح رائے موصول ہو چکی ہے، لہٰذا کورونا کے حوالے سے یہ کہنا زیادہ مناسب ہو گا کہ “کورونا وبا ہے، احتیاط جس کی شفا ہے”۔ کابینہ

کابینہ نے فوزیہ خان کو پاکستان سٹینڈرڈز اینڈ کوالٹی کنٹرول اتھارٹی میں ڈپٹی ڈائریکٹر جنرل (فنانس) جبکہ اعزاز احمد کو منیجنگ ڈائریکٹر نیشنل ٹرانسمیشن اینڈ ڈسپیچ کمپنی (این ٹی ڈی سی) اور طارق رشید کو ڈائریکٹر جنرل فیڈرل گورنمنٹ ایمپلائز ہاﺅسنگ اتھارٹی تعینات کرنے کی منظوری دی۔

کابینہ کو بتایا گیا کہ براڈشیٹ ایوارڈ کمیشن آف انکوائری کے چئیرمین جسٹس (ر) شیخ عظمت سعید نے بطور چئیرمین کسی قسم کا مشاہرہ لینے سے انکار کر دیا ہے  کابینہ ارکان نے نے جسٹس عظمت سیعد کے اس فیصلے کو سراہا۔

کابینہ کمیٹی برائے سی پیک کے 3 فروری 2021ء اور  22 فروری 2021ء کے اجلاسوں میں لیے گئے فیصلوں جبکہ کابینہ کمیٹی برائے توانائی کے 11 فروری 2021ء اور اقتصادی رابطہ کمیٹی کے 19 فروری 2021ء کے اجلاسوں میں لئے گئے فیصلوں کی منظوری دی گئی۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here