سعودی عرب: 387 غیرملکی انجینئرز کی ڈگریاں جعلی ثابت

116

ریاض: سعودی عرب کی انجینئرنگ کونسل (ایس سی ای) نے کہا ہے کہ سال 2020ء کے دوران ملک بھر میں کام کرنے والے 387 غیرملکی انجینیئرز کی ڈگریاں جعلی ثابت ہوئی ہیں۔

العربیہ نیوز کے مطابق انجینئرنگ کونسل کے ترجمان عبدالناصر العبد اللطیف نے بتایا کہ ملک بھر میں کام کرنے والے انجینئرز نے گزشتہ سال 16 ہزار 887 سے زیادہ ڈگریاں جمع کرائیں جن میں سے بہت ساری ڈگریاں غیر معیاری ثابت ہونے پر مسترد کر دی گئیں۔

ترجمان کے مطابق غیرملکی انجینئرز نے ایسی ڈگریاں بھی جمع کرا دی تھیں جو ایس سی ای کے معیار پر پوری نہیں اترتیں، کئی انجینئرز نے پانچ  سالہ کورس کے بجائے تین سالہ کورس والی ڈگریاں پیش کی تھیں۔

انہوں نے کہا کہ سال 2020ء کے دوران ایس سی ای میں رجسٹرڈ سعودی انجینئرز کی تعداد 13 ہزار 465 تک پہنچ گئی ہے۔

ترجمان نے کہا کہ انجینئرنگ کے پیشے پر کام کرنے کیلئے مقررہ قواعد و ضوابط کی پابندی لازمی ہے، تمام اداروں اور کمپنیوں کو اس بات کا لحاظ رکھنے کی تاکید کی گئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پیشہ وارانہ اندراج کے بغیر کام کرنے اور کرانے پر 10 لاکھ ریال تک جرمانہ مقرر ہے، انجینیرنگ کنسلٹینسی بلالائسنس کھولنے پر 10لاکھ ریال تک کا جرمانہ اور ایک برس تک قید کی سزا ہے جو ایجنسی غیرقانونی اندراج کرائے گی اس کے ذمہ دار پر 10 لاکھ ریال جرمانہ اور ایک برس قید کی سزا ہو گی۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here