جون تک پاکستان کو ویکسین کی ایک کروڑ 72 لاکھ خوراکیں ملنے کا امکان

مارچ 2021ء کے اختتام تک آکسفورڈ آسٹرازینکا کی 60 لاکھ سے 70 لاکھ خوراکیں بھی پاکستان پہنچنے کا امکان ہے

216

اسلام آباد: عالمی مالیاتی فنڈز(آئی ایم ایف) نے کہا ہے کہ پاکستان کو رواں سال کی پہلی ششماہی کے دوران کورونا ویکسین کی ایک کروڑ 72 لاکھ خوراکیں ملیں گی۔

آئی ایم ایف کے مطابق اقوام متحدہ کی یو این کوویکس سہولت کے تحت پاکستان میں وائرس سے زیادہ متاثر ہونے والے طبقات کے تحفظ کیلئے حفاظتی ویکسین فراہم کی جائے گی۔

رواں سال کی پہلی ششماہی کے دوران پاکستان کو آکسفورڈ آسٹرازینکا ویکسین کی ایک کروڑ 72 لاکھ خوارکیں فراہم کی جائیں گی جن کی مدد سے ملک کی تقریباََ 20 فیصد آبادی کو کووڈ-19 سے بچاﺅ کی ویکسین لگائی جائے گی۔

یہ بھی پڑھیے: 

پاکستان کو چین سے کورونا ویکسین کی پہلی کھیپ موصول

پاکستانی فارما کمپنی اے جی پی کو روسی کورونا ویکسین درآمد کرنے کی اجازت

بھارت کورونا ویکسین کی ایک ارب 10 کروڑ خوراکیں ڈبلیو ایچ او کو فراہم کرے گا

آئی ایم ایف نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ پاکستان کووڈ-19 کے بحران سے نمٹنے کےلئے مختلف اقدامات کر رہا ہے، پاکستان کو فروری 2021ء کے اوائل میں چین کی جانب سے پانچ لاکھ ویکسین کی خوراکیں عطیہ کی گئی ہیں جبکہ رواں ماہ کے اختتام پر ویکسین کی مزید چھ لاکھ خوراکیں پاکستان پہنچ جائیں گی۔

رپورٹ کے مطابق پاکستان نے روس میں تیار کی جانے والی حفاظتی ویکسین سمیت دیگر مختلف کمپنیوں کی ویکسین کے حصول کیلئے اقدامات جاری رکھے ہوئے ہیں۔

آئی ایم ایف کے مطابق پاکستانی حکام عالمی بینک اور ایشیائی ترقیاتی بینک سے فنڈز کے حصول کیلئے بھی اقدامات کر رہے ہیں تاکہ 25 کروڑ ڈالر کی مزید ویکسین کی براہ راست خریداری کی جا سکے۔

رپورٹ کے مطابق جون 2021ء کے اختتام تک پاکستان کو 17 ملین حفاظتی ویکسین کی خوراکیں مل جائیں گی جبکہ اس سے پہلے مارچ 2021ء کے اختتام تک آکسفورڈ آسٹرازنکا کی 60 لاکھ سے 70 لاکھ خوراکیں بھی پاکستان پہنچنے کا امکان ہے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here