2029-30ء تک گیس کی طلب و رسد میں فرق 5 ہزار ایم ایم سی ایف ڈی تک بڑھنے کا امکان

اوگرا کی پٹرولیم مصنوعات کی پیداوار، طلب اور رسد کے حوالہ سے 2018-19ء کی سالانہ رپورٹ جاری

128

اسلام آباد:  آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) نے ملک میں پٹرولیم مصنوعات کی پیداوار،  طلب اور رسد کے حوالہ سے 2018-19ء کی سالانہ رپورٹ جاری کر دی ہے جس کے مطابق 2029-30ء تک گیس کی طلب و رسد میں فرق 5 ہزار 389 ایم ایم سی ایف ڈی تک بڑھنے کا امکان ہے۔

رپورٹ کے مطابق 2018-19ء میں گیس کی طلب و رسد میں فرق 1440 ایم ایم سی ایف ڈی تھا جو کہ 2024-25ء تک توقع ہے کہ یہ بڑھ کر 3684 ایم ایم سی ایف ڈی اور 2029-30ء تک 5389 ایم ایم سی ایف ڈی ہو جائے گا۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ 2018-19ء میں پٹرولیم مصنوعات کی کھپت 20.62 فیصد کی کمی کے ساتھ ایک کروڑ 95 لاکھ 60 ہزار ٹن تھی جو کہ 2017-18ء میں 2 کروڑ 46 لاکھ 40 ہزار ٹن رہی تھی۔

رپورٹ کے مطابق ملک میں گیس پیدا کرنے والی فیلڈ سے ایل پی جی کی فراہمی میں اس عرصہ کے دوران 9 فیصد کا اضافہ دیکھنے میں آیا اور 2018-19ء میں ایل این جی کی درآمد 901 ایم ایم سی ایف ڈی رہی جو کہ 2017-18ء میں 754 ایم ایم سی ایف ڈی تھی۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here