منی لانڈرنگ کی تحقیقات کے دوران 40 کروڑ ڈالر مالیت کی کرپٹو کرنسی برآمد

126

لندن: برطانوی پولیس نے دو واقعات میں ریکارڈ 29 کروڑ 40 لاکھ پائونڈ (40 کروڑ 80 لاکھ ڈالر) کی کرپٹو کرنسی برآمد کی ہے جس کے بارے میں خدشات ہیں کہ اسے مجرمانہ سرگرمیوں میں استعمال کیا گیا۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے کے مطابق پولیس کا کہنا ہے کہ بین الاقوامی سطح پر منی لانڈرنگ کے ایک کیس کی تحقیقات کے دوران یہ بڑی چوری پکڑی گئی ہے، اس دوران 18 کروڑ پائونڈ مالیت کے برابر کرپٹو کرنسی برآمد کی گئی۔

پولیس کا ماننا ہے کہ اس چوری کا تعلق گذشتہ مہینے ہونے والے واقعہ سے ہے، میٹرو پولیٹن پولیس کے جاسوس کانسٹیبل جورائن نے ایک بیان میں کہا کہ تقریباً ایک مہینہ قبل ہم نے 11.4 کروڑ پائونڈ کے برابر کرپٹو کرنسی برآمد کی تھی۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ ’اس وقت سے ہماری تحقیقات پیچیدہ اور بڑے پیمانے پر ہو رہی ہیں، ہم نے اس رقم اور اس سے ممکنہ طور پر جڑے جرم کا پتہ لگانے کے لیے بہت محنت کی ہے۔‘

واضح رہے کہ گزشتہ مہینے کرپٹو کرنسی کی برآمدگی کے بعد 24 جون کو منی لانڈرنگ کے خدشات پر ایک 39 سالہ خاتون کو گرفتار کیا گیا تھا تاہم ان کو بعد میں ضمانت پر رہا کر دیا گیا۔

خاتون کا 10 جولائی کو 18 کروڑ پائونڈ کی چوری سے متعلق انٹرویو کیا گیا تھا۔ نائب اسسٹنٹ کمشنر گراہم میک نلٹی کا کہنا تھا کہ جرم کی دنیا میں کیش اب بھی بادشاہ ہے، لیکن ڈیجیٹل پلیٹ فارمز کے بننے کے بعد ہم مجرموں کو منی لانڈرنگ کرنے کیلئے کرپٹو کرنسی کا استعمال کرتے ہوئے دیکھ رہے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ پہلے اس کے خلاف کارروائی کرنا مشکل تھا لیکن اب پولیس کو اس پر ٹریننگ دی گئی ہے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here