پنجاب نے سالانہ  ہدف کا 70 فیصد ٹیکس اکٹھا کر لیا

صوبائی حکومت  نے 220.9 ارب روپے ہدف کے مقابلے میں 8 ماہ کے دوران 156.2 ارب روپے ٹیکس وصول کر لیا

266

اسلام آباد: پنجاب کے ٹیکس محصولات میں جاری مالی سال کے ابتدائی 8 ماہ کے دوران 8.9 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔

حکومت پنجاب کے محکمہ خزانہ کی رپورٹ کے مطابق رواں مالی سال میں صوبائی حکومت نے مختلف ٹیکسز کی مد میں 156.2 ارب روپے کی وصولیاں کی ہیں جبکہ گزشتہ مالی سال کے پہلے آٹھ مہینوں کے دوران ٹیکس محصولات کا حجم 143.4 ارب روپے رہا تھا۔

اس طرح گزشتہ مالی سال کے مقابلہ میں رواں مالی سال کے ابتدائی 8 ماہ کے دوران ٹیکس وصولیوں میں 12.8 ارب روپے یعنی 8.9 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔

جاری مالی سال کے لیے پنجاب حکومت نے 220.9 ارب روپے کے ٹیکس محصولات کا ہدف مقرر کر رکھا ہے، اس طرح مالی سال میں جولائی تا فروری 2020-21ء کے دوران صوبائی حکومت نے ہدف کے مقابلہ میں 70.7 فیصد ٹیکس وصولیاں کر لی ہیں۔

دوسری جانب پنجاب ریونیو اتھارٹی (پی آر اے) کو خدمات پر سیلز ٹیکس وصولیوں میں رواں مالی سال کے دوران 35.4 فیصد اضافہ ہوا ہے۔

پنجاب ریونیو اتھارٹی کے اعدادوشمار کے مطابق جاری مالی سال کے پہلے 8 ماہ جولائی تا فروری 2020-21ء کے دوران خدمات پر سیلز ٹیکس کی مد میں 93.2 ارب روپے وصول کیے گئے جبکہ گزشتہ مالی سال کی اسی مدت کے دوران 68.8 ارب روپے ٹیکس وصول کیا گیا تھا۔

اس طرح گزشتہ مالی سال کے مقابلہ میں رواں مالی سال کے ابتدائی 8 ماہ میں سروسز سیکٹر سے سیلز ٹیکس وصولیوں میں 24.4 ارب روپے یعنی 35 فیصد سے زیادہ کا نمایاں اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ کووڈ۔19 کی وبا اور وائرس کے معاشی اثرات کے خاتمہ کے لیے کاروباری شعبہ کی معاونت کے مختلف اقدامات کے باوجود خدمات پر سیلز ٹیکس محصولات میں اضافہ حوصلہ افزاء ہے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here