ویکسین کی مقامی پیداوار کیلئے پاکستانی اور چینی کمپنیوں میں معاہدہ

154

 کراچی: جیسا کہ کورونا وائرس ویکسین کی طلب میں اضافہ ہو رہا ہے ایک مقامی فارماسیوٹیکل کمپنی نے چینی کمپنی کے ساتھ پاکستان میں ویکسین کی پیداوار اور ویکسین شاٹس سپلائی کرنے کی اجازت دینے کا معاہدہ کیا ہے۔ 

میڈیا رپورٹس کے مطابق ایم ایس سیرل کمپنی لمیٹڈ نے چینی کمپنی لیوزون مافارم انکارپوریشن کے ساتھ ملک میں کورونا وائرس ویکسین (V-01) کی تیاری کا معاہدہ کیا ہے۔

کمپنی نے ایک بیان میں کہا ہے کہ “سیرل کمپنی نے لیوزون مافارم انکارپوریشن کے ساتھ ری کومیبیننٹ نوول کوروناوائرس ویکسین (V-01) کی سپلائی اور لائسنسنگ کے معاہدے کو حتمی شکل دے دی ہے۔ لائسنسنگ معاہدہ پاکستان میں (V-01) کی مینوفیکچرنگ ٹرانزیشن کو بھی کور کرتا ہے”۔

رپورٹس کے مطابق ویکسین حتمی ٹرائلز میں ہے اور توقع ہے کہ یہ مؤثر نتائج ظاہر کرے گی۔ کمپنی نے امید ظاہر کی ہے کہ وہ وبا کے خلاف مجموعی طور پر قدر شامل کرے گی۔

فرم کئی ممالک میں تیسرے مرحلے کی کلینیکل سٹڈی کرنے میں مصروف ہے اور اس کے مؤثر استعمال کی جانچ پڑتال کے لیے اس نے V-01 پروگرام کے امیونوجینیسٹی اور تحفظ کے لیے 20 ہزار سے زائد مضامین میں اِن رولڈ کیا ہے۔

اس سے قبل چینی بائیو فارماسیوٹیکل فرم سائینوویک نے کہا تھا کہ کورونا وائرس ویکسین کے لیے اس کی تیسری پروڈکشن لائن استعمال ہونے جارہی ہے، اس امر سے اس کی سالانہ صلاحیت 2 ارب خوراکوں سے بڑھ جائے گی۔

کمپنی کی کورونا وائرس ویکسین چار مقامی ویکسین میں سے ایک ہے جنہیں چینی حکام کی طرف سے شرائط پر منظوری دی گئی ہے جو ہنگامی ادویات کو مارکیٹ تک لانے میں مدد فراہم کرتی ہے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here