غیرملکی سرمایہ کاروں نے پاکستان میں سماجی ذمہ ادری کی ادائیگی کیلئے 16 ارب روپے خرچ کیے

153

اسلام آباد: غیرملکی سرمایہ کاروں نے پاکستان میں مالی سال 2019-20ء کے دوران کاروباری و سماجی ذمہ ادری کی ادائیگی کیلئے 16 ارب روپے خرچ کیے ہیں۔

اوورسیز انویسٹرز چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری (او آئی سی سی آئی) کی رپورٹ کے مطابق او آئی سی سی آئی کے رکن اداروں نے کاروباری و سماجی ذمہ داریوں کی ادائیگی کے لیے مجموعی طور پر 8 ارب روپے کی سرمایہ کاری کی جبکہ پاکستان بھر میں 6 کروڑ 20 لاکھ افراد سے زیادہ براہ راست مستفید ہونے والوں کی معاونت کے اخراجات اس کے علاوہ ہیں۔

او آئی سی سی آئی کی سالانہ سی ایس آر رپورٹ 2019-20ء کے مطابق پاکستان میں غیرملکی سرمایہ کاروں کی جانب سے کاروباری و سماجی ذمہ داریوں کی ادئیگی کے تحت مجموعی طور پر 16 ارب روپے خرچ کیے گئے ہیں۔

کووڈ۔19 کی حالیہ وبا کی مشکلات کے خاتمہ کے لیے 100 سے زیادہ غیرملکی سرمایہ کاروں نے حکومتی اقدامات کی بھرپور معاونت بھی کی ہے۔

رپورٹ کے مطابق او آئی سی سی آئی کے رکن اداروں نے اپنے منفرد سی ایس آر پروگرام کے تحت اپنے ملازمین کی معاونت سے 1.5 ملین گھنٹے صرف کیے ہیں اور سماجی و ترقیاتی شعبہ کے 160 مختلف اداروں کے ساتھ شراک داری کے تحت اقدامات بھی کیے ہیں۔

اس حوالہ سے سندھ میں 29 فیصد، پنجاب میں 26 فیصد، خیبرپختونخوا میں 14 فیصد، بلوچستان میں 12 فیصد، سابقہ فاٹا میں 6 فیصد، گلگت بلتستان اور کشمیر میں 8، 8 فیصد وسائل سے استفادہ کیا گیا ہے۔

او آئی سی سی آئی میں 200 غیرملکی سرمایہ کار شامل ییں جو پاکستان کے مختلف شعبوں میں کام کر رہے ہیں جن کا تعلق دنیا کے 35 مختلف ممالک سے ہے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here