چھ ماہ میں پاکستانیوں نے کتنے کروڑ ڈالر کی غیرملکی گاڑیاں درآمد کیں؟

449

اسلام آباد: جاری مالی سال 2020-21ء کی پہلی ششماہی کے دوران نئی غیر ملکی کاروں، سپورٹس گاڑیوں اور پک اَپس کی طلب میں اضافہ کے نتیجہ میں مکمل تیار شدہ گاڑیوں کی درآمدات 193.7 فیصد تک بڑھ گئیں۔

آل پاکستان موٹر ڈیلرز ایسوسی ایشن کی رپورٹ کے مطابق رواں مالی سال میں جولائی تا دسمبر 2020ء کے دوران مکمل تیار شدہ گاڑیوں کی درآمدات کا حجم نو کروڑ 40 لاکھ ڈالر تک بڑھ گیا جبکہ گزشتہ مالی سال میں جولائی تا دسمبر 2019ء کے دوران تین کروڑ 20 لاکھ ڈالر کی مکمل تیار شدہ غیرملکی گاڑیاں درآمد کی گئی تھیں۔

اس طرح گزشتہ مالی سال کے مقالبہ میں رواں مالی سال کی پہلی ششماہی کے دوران غیرملکی گاڑیوں کی قومی درآمدات میں چھ کروڑ 20 لاکھ ڈالر یعنی 194 فیصد کے قریب اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیے: 

’ٹینک بنا رہے ہیں، کاریں نہیں بنا سکتے‘

سال 2020ء: ملک بھر میں کتنی کاریں فروخت ہوئیں؟

قیمتیں بڑھنے کے باوجود 55 ہزار کاریں، آٹھ لاکھ موٹرسائیکلز فروخت

مالی سال کے پہلے چھ ماہ میں پاکستان میں کتنی کاریں فروخت ہوئیں؟

سال 2020ء: دنیا بھر میں سب سے زیادہ کاریں کس کمپنی نے فروخت کیں؟

دوسری جانب پاکستان آٹو موبائل مینوفیکچرنگ ایسوسی ایشن (پاما) کی رپورٹ کے مطابق جاری مالی سال میں جولائی تا دسمبر 2020ء کے دوران ملک میں مقامی تیار شدہ کاروں کے 67 ہزار 26 یونٹس فروخت ہوئے جبکہ گزشتہ مالی سال کی اسی مدت میں 59 ہزار 94 کاریں فروخت ہوئی تھیں،یوں کاروں کی فروخت میں چھ ماہ کے دوران سات ہزار 932 یونٹس یعنی 13 فیصد سے زیادہ اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔

اسی طرح جاری مالی سال کی پہلی ششماہی کے دوران کاروں کی پیداوار بھی 1.93 فیصد اضافہ سے 60 ہزار 862 یونٹس کے مقابلہ میں 62 ہزار 41 یونٹس تک پہنچ گئی۔

رپورٹ کے مطابق ہنڈا کاروں کی فروخت میں 72.90 فیصد کا نمایاں اضافہ ریکارڈ کیا گیا اور فروخت کا حجم چھ ہزار 916 یونٹس کے مقابلہ میں 11 ہزار 958 یونٹس تک بڑھ گیا۔ سوزوکی سوئفٹ کی فروخت 12.14 فیصد کی کمی سے 1136 یونٹس کے مقابلہ میں 998 یونٹس تک کم ہو گئی۔

گزشتہ مالی سال کے مقابلہ میں رواں مالی سال کے پہلے 6 ماہ میں ٹویوٹا کرولا کاروں کی فروخت مین بھی 28.23 فیصد کمی واقع ہوئی ہے اور فروخت کا حجم 11 ہزار 742 یونٹس کے مقابلہ میں 8427 یونٹس تک کم ہو گیا۔

پاما کے مطابق سوزوکی کلٹس کی فروخت میں بھی 20.50 فیصد اضافہ سے 4546 یونٹس کے مقابلہ میں 5478 یونٹس تک پہنچ گئی۔ سوزوکی آلٹو کی فروخت میں 31.43 فیصد کمی واقع ہوئی ہے اور فروخت کا حجم 23 ہزار 658 یونٹس کے مقابلہ میں 16 ہزار 221 یونٹس تک کم ہو گیا ہے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here