سی پیک کی نگرانی کیلئے پاکستان اور چین کا مشترکہ پارلیمانی کمیٹی کی تشکیل پر اتفاق

194

اسلام آباد: پاکستان اور چین نے سی پیک کی نگرانی کیلئے مشترکہ پارلیمانی کمیٹی تشکیل دینے پر اتفاق کیا گیا۔

چین کی نیشنل پیپلز کانگریس (این پی سی) کے چیئرمین لی زانشو اور سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کے مابین ویڈیو لنک کے ذریعے ورچوئل بات چیت ہوئی جس میں سی پیک سمیت دوطرفہ تعلقات اور اہم علاقائی و عالمی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

قومی اسمبلی سیکرٹریٹ کے مطابق سپیکر اسد قیصر نے کہا کہ پاکستان کو چین کے ساتھ اپنی بے مثال دوستی پر فخر ہے، سی پیک منصوبہ دونوں ممالک کے لیے انتہائی اہمیت کا حامل ہے۔

سپیکر نے کہا کہ پاکستان ون چائنا پالیسی کی مکمل حمایت کرتا ہے، دونوں ممالک میں 70 سالوں پر محیطِ دوستی دنیا کے لیے ایک مثال ہے، پاکستان مسئلہ کشمیر پر چین کے بھرپور تعاون پر مشکور ہے۔

بات چیت میں دونوں ممالک کے پارلیمان کی قائمہ کمیٹیوں اور فرینڈشپ گروپ کے مابین ویڈیو لنک کے ذریعے ورچوئل اجلاسوں کے انعقاد پر بھی اتفاق کیا گیا۔

اسد قیصر نے یقین دلایا کہ سی پیک کے تحت قائم منصوبوں کو ہر ممکن سکیورٹی مہیا کی جائے گی اور اس کے تحت قائم کیا جانے والا رشک زئی اکنامک زون علاقے کی تقدیر بدلنے میں اہم سنگ میل ثابت ہو گا۔

چیئرمین این پی سی چائنا نے کہا کہ چین پاکستان کے ساتھ سدا بہار دوستی کو مزید مستحکم بنانے کا خواہاں ہے، چین کی خارجہ پالیسی میں پاکستان کے ساتھ دوستی کلیدی اہمیت کی حامل ہے، دونوں ممالک کے قانون ساز اداروں میں رابطے دوستی کے رشتے کو مزید وسعت دینے میں اہم کردار ادا کر سکتے ہیں۔

چیئرمین این پی سی نے کہا کہ رشک زئی اکنامک زون کے قیام کے سلسلے میں اسپیکر قومی اسمبلی آف پاکستان کی کاوشیں قابل ستائش ہیں۔ چین پاکستان کی سلامتی اور عالمی سطح پر مفادات کے تحفظ میں بھرپور کردار ادا کرتا رہے گا۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here