’کاروباری آسانیوں کے لحاظ سے پاکستان 190 ممالک میں سے 108ویں نمبر پر آ گیا‘

657

فیصل آباد: حکومت کی جانب سے کاروباری آسانیاں پیدا کرنے کی سنجیدہ کوششوں کے باعث عالمی بینک کی درجہ بندی میں پاکستان دنیا کے 190 ممالک میں سے 140ویں پوزیشن سے 108ویں نمبر پر آ گیا ہے اور توقع ہے کہ فروری مارچ 2021ء میں آن لائن بزنس پورٹل شروع ہونے کے بعد پاکستان کا شمار دنیا کی 90 اہم معیشتوں میں ہو گا۔

ایڈیشنل سیکرٹری سرمایہ کاری بورڈ محمد مکرم جان انصاری نے بدھ کے روز پاکستان ریگولیٹری ماڈرنائزیشن ایشو سے متعلق اہم کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے بتایا کہ 24 جون 2019ء کو پاکستان ریگولیٹری ماڈرنائزیشن ایشو(پی آر ایم آئی) کا اجلاس وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت ہوا جس میں سٹیئرنگ کمیٹی قائم کرنے کا فیصلہ کیا گیا اور اس کمیٹی کو کامیاب کرنے کیلئے زیادہ سے زیادہ آسانیاں پیدا کرنے کی ذمہ داری سونپی گئی۔

انہوں نے پی آر ایم آئی کی اب تک کی کوششوں کے بارے میں بتاتے ہوئے کہا کہ یہ تعارفی سیشن کورونا کی وجہ سے آن لائن ہو رہا ہے جبکہ صورت حال بہتر ہونے پر وہ فیصل آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری سمیت دیگر سرکردہ چیمبرز کا بھی دورہ کریں گے تاکہ ان سے براہ راست مشاورت کی جا سکے۔

انہوں نے بتایا کہ پی آر ایم آئی نے اپنے بنیادی مقصد کے حصول کیلئے پہلے نظام کو آن لائن اور یکجا کرنے کا فیصلہ کیا ہے جس سے کاروباری آسانیوں کے حوالے سے ہماری درجہ بندی میں بتدریج بہتری آ رہی ہے اور توقع ہے کہ اس نتیجہ میں لوگ زیادہ سے زیادہ سرمایہ کاری کریں گے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ کاروبار کے نظام کو باہم مربوط بنا کر نیا کاروبار شروع کرنے والوں کیلئے دس مراحل کو پانچ تک محدود کر دیا گیا ہے، اسی طرح اجازت نہ ملنے، پراپرٹی کی رجسٹریشن اور بجلی کے کنکشن کے حصول کی مدت میں کمی کے علاوہ آن لائن ٹیکسوں کی ادائیگی کا دورانیہ بھی کم ہوا ہے۔

کاروبار کرنے والوں پر ریگولیٹری بوجھ  کے حوالے سے انہوں نے بتایا کہ نظام میں بہتری اور آسانیاں پیدا کرنے کیلئے وفاقی اور صوبائی حکومتوں کے متعلقہ اداروں کو مشاورت میں شامل کیا گیا ہے جبکہ ادارہ جاتی مسائل کے حوالے سے 60 ایجنسیاں کام کر رہی ہیں جس کی تعداد کو کم کیا جا رہا ہے تاکہ تمام ایک ہی چھت کے نیچے نیا کاروبار شروع کرنے والوں کو وَن ونڈو سہولت مہیا کی جا سکے۔

تعارفی سیشن میں فیصل آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے ایگزیکٹو ممبرعبداللہ قادری، میاں طاہر یعقوب اور سیکرٹری جنرل ملک عبدالقیوم سمیت ریسرچ اینڈ ڈویلپمنٹ کے سٹاف نے بھی شرکت کی۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here