سعودی عرب کی تاریخ کا سب سے بڑا نجی فوجی معاہدہ

479

ریاض: سعودی عریبین ملٹری انڈسٹریز (سامی) نے توانائی، آئی سی ٹی اور دفاعی سروسز فراہم کرنے والی کمپنی خریدنے کا فیصلہ کیا ہے جو کہ نجی ملٹری انڈسٹریز کی سب سے بڑی ڈیل ہے۔

سامی کی جانب سے ایڈوانس الیکٹرانکس کمپنی (اے ای سی) کی خریداری 2021ء کے پہلے چار ماہ میں متوقع ہے۔ سعودی عریبین ملٹری انڈسٹریز دراصل سعودی پبلک انویسٹمنٹ فنڈ (پی آئی ایف) کا ذیلی ادارہ ہے۔

اس کے چیئرمین احمد الخطیب نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ایڈوانس الیکٹرانکس کمپنی کو سعودی عرب کی ملٹری انڈیسٹریز کے تاج کا ہیرا یعنی اہم ترین حصہ سمجھا جاتا ہے اور دفاعی شعبے میں ہونے والے اقدامات بھی یہیں سے طے ہوتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ سامی اور اے ای سی کی مشترکہ کوششوں سے مقامی سطح پر دفاعی ایکوسسٹم بنایا جائے گا جس کے آنے والے سالوں میں قومی معیشت پر دیرپا اثرات مرتب ہوں گے۔

یہ معاہدہ ویژن 2030ء کے ضمن میں ہو رہا ہے جس میں 50 فیصد تک فوجی سامان مقامی سطح پر تیار کرنا بھی شامل ہے، اس وقت اے ای سی کے 85 فیصد ملازمین سعودی شہری ہیں جن میں 500 انجینئرز بھی شامل ہیں۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here