ازبکستان کے وفد کی وزیر ریلوے سے ملاقات، کارگو ٹرین سروس پر بات چیت

پشاور سے کابل اور تاشقند جانے والے 573 کلومیٹر طویل ریلوے ٹریک پر 27 سٹیشن، 912 مختلف النوع تعمیرات اور سات ٹنل تعمیر کیے جائیں گے۔

433

اسلام آباد: وفاقی وزیر ریلوے اعظم خان سواتی سے ازبکستان کے وزیر ٹرانسپورٹ ایلکام ماکاموو کی زیرقیادت ایک وفد نے ملاقات کی، ملاقات میں دوطرفہ تعلقات، کارگو ٹرین سروس سمیت دیگر امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

یہ ملاقات ٹرانس افغان ریل پراجیکٹ کے سلسلے میں کی گئی ہے جس کے تحت پاکستان اور ازبکستان کو افغانستان کے ذریعے ریل لنک سے ملایا جائے گا۔ بعد ازاں باقی وسطی ایشیائی ممالک بھی اس میں شامل ہو سکیں گے۔

اس پراجیکٹ کے ذریعے پاکستان، افغانستان اور ازبکستان کے مابین کارگو سروس شروع کی جا سکے گی۔ آج (29 دسمبر) وزیراعظم عمران خان ٹرانز افغان ریل لنک کے لئے ورلڈ بینک کے نام سہ ملکی مشترکہ اپیل پر دستخط بھی کریں گے۔

واضح رہے کہ اس سہ ملکی مشترکہ اپیل پر پہلے ہی افغانستان اور ازبکستان کے صدور دستخط کر چکے ہیں۔

وزیر ریلوے اعظم خان سواتی نے کہا کہ تین ممالک کی جانب سے 4.8 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کی اپیل ورلڈ بینک کو کی جائے گی جو پہلے ہی اس اپیل کے حوالے سے آن بورڈ ہے، یہ ریلوے لنک تینوں ممالک کی معاشی ترقی میں اہم کردار ادا کرے گا۔

انہوں نے کہا کہ مشترکہ اپیل کے تحت حاصل ہونے والے سرمائے سے 573 کلومیٹر طویل ریلوے لنک بچھایا جائے گا، اس ٹریک پر 27 سٹیشن، 912 مختلف النوع تعمیرات اور سات ٹنل تعمیر کیے جائیں گے۔

اعظم خان سواتی نے کہ مختصر ترین معاشی ٹریک پشاور سے کابل اور کابل سے مزار شریف کے ذریعے ازبکستان کے ساتھ جا ملے گا، خطے کی معیشت کو جوائنٹ وینچر کے ذریعے مضبوط کریں گے، دہشت گردوں کو نکال باہر کریں گے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here