فضائی سفر کے دوران کورونا وائرس پھیلنے کے کتنے امکانات؟  نئی تحقیق سامنے آ گئی

44

واشنگٹن: امریکی وزارت دفاع کی طرف سے کیے گئے ایک نئے تحقیقی مطالعے میں کہا گیا ہے کہ فضائی سفر کے دوران کورونا وائرس پھیلنے کے امکانات نہ ہونے کے برابر ہیں۔

امریکی نشریاتی ادارے کے مطابق اس تحقیق سے پتا چلتا ہے فضائی سفر کے دوران ماسک پہننے والے مسافر کی سانس خارج کرنے کے دوران صرف 0.003 بیکٹریا ہوا میں داخل ہو سکتے ہیں جو کہ نہ ہونے کے برابر ہیں تاہم اسے عالمی سطح پر ماہرین صحت کی طرف سے مصدقہ طور پر تسلیم نہیں کیا گیا۔

یہ رپورٹ برطانوی نشریاتی ادارے سکائی نیوز نے بھی نشر کی ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ہوائی جہازوں میں سیٹیں ایک دوسرے کے ساتھ ملی ہوئی ہوں تب بھی جہاز میں سیٹیں خالی چھوڑنے کی ضرورت نہیں۔

رپورٹ کے مطابق اگر کوئی کورونا مریض ہوائی جہاز میں سوار ہے اور اس نے ماسک پہن رکھا ہے تو اس بات کا امکان بہت کم ہے کہ اس کی سانس لینے سے وائرس دوسرے مریضوں تک پہنچ سکے۔

امریکی محکمہ دفاع نے حال ہی میں دو کمرشل پروازوں بوئنگ 777 اور بوئنگ767میں اس کا تجربہ کیا۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ہوائی جہاز کے اندر موجود ایئر سسٹم تمام بیکٹریاز کو 99.99 فیصد صرف چھ منٹ کے اندر تلف کر دیتا ہے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here