’تعمیراتی شعبے سے 112 کمپنیاں ایف بی آر کیساتھ رجسٹرڈ، 123 منصوبوں پر کام کریں گی‘

سندھ میں 19 منصوبوں کی منظوری، 75 کیلئے این او سی جاری، خیبر پختونخوا میں ہاﺅسنگ منصوبوں کی کل سرمایہ کاری 83 ارب روپے تک پہنچ گئی، اجلاس میں بریفنگ

187

اسلام آباد: چیئرمین فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) نے صدارت قومی رابطہ کمیٹی برائے ہاﺅسنگ، کنسٹرکشن اینڈ ڈویلپمنٹ کے اجلاس میں بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ  کنسٹرکشن شعبہ سے منسلک 112 افراد اور کمپنیاں ایف بی آر کے ساتھ رجسٹر ہو چکے ہیں جو 123 منصوبوں پر کام کریں گے۔

قومی رابطہ کمیٹی برائے ہاﺅسنگ، کنسٹرکشن اینڈ ڈویلپمنٹ کا ہفتہ وار اجلاس جمعرات کووزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت منعقد ہوا۔

وزیراعظم آفس کے میڈیا ونگ سے جاری بیان کے مطابق اجلاس کو چیئرمین ایف بی آر نے آن لائن رجسٹریشن سسٹم اور آگاہی سیمینار کے حوالہ سے بریفنگ دی۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ کراچی، لاہور اور اسلام آباد میں آگاہی سیمینار منعقد کئے جا چکے ہیں۔

چیف سیکرٹری سندھ نے اجلاس کو بتایا کہ سرمایہ کاروں کے لئے ون ونڈو پورٹل کام کر رہا ہے جس کے تحت سندھ میں 19 منصوبوں کی منظوری دی جا چکی ہے، 75 منصوبوں کے لئے این او سی جاری کئے جا چکے ہیں۔ منصوبوں کی نگرانی کے لئے کمیٹی نوٹیفائی کر دی گئی ہے جس میں پرائیویٹ سیکٹر کے نمائندے بھی شامل ہیں۔

چیف سیکرٹری خیبرپختونخوا نے اجلاس کو بتایا کے صوبہ میں ہاﺅسنگ اور کنسٹرکشن کے منصوبوں کی کل سرمایہ کاری 83 ارب روپے تک پہنچ چکی ہے اور سیمنٹ، اینٹوں اور سریے کی فروخت میں خاطر خواہ اضافہ دیکھا گیا ہے۔

گورنر سٹیٹ بینک نے بتایا کے آسان اقساط کے حوالہ سے تمام پرائیویٹ بینکوں سے مشاورت کا عمل مکمل کر لیا گیا ہے اور ان کے تحفظات دور کئے جا چکے ہیں۔

وزیراعظم نے ہدایت کی کہ اجازت نامہ مہیا کرنے کے عمل کو شفاف، آسان اور مختصر مدتی بنایا جائے تاکہ سرمایہ کاروں کو آسانی ہو

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here