سعودی عرب میں مقیم پاکستانیوں کی جانب سے ترسیلات زر میں 33.66 فیصد اضافہ

جولائی سے ستمبر 2020ء تک سعودی عرب میں مقیم  پاکستانیوں نے 2.080 ارب ڈالر، ستمبر میں 665.82 ملین ڈالر کی ترسیلات بھیجیں، سٹیٹ بینک

244

اسلام آباد: سعودی عرب میں مقیم پاکستانیوں کی جانب سے ترسیلات زر میں مالی سال کی پہلی سہ ماہی (جولائی تا ستمبر) کے دوران گزشتہ مالی سال کی اسی مدت کے مقابلہ میں 33.66 فیصداضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔

سٹیٹ بینک کی جانب سے جاری اعدادوشمار کے مطابق جولائی سے لیکر ستمبر 2020ء تک کی مدت میں سعودی عرب میں مقیم  پاکستانیوں نے 2.080 ارب ڈالر کا زرمبادلہ پاکستان بھیجا جو گزشتہ مالی سال کی اسی مدت کے مقابلہ میں 33.66 فیصد زیادہ ہے۔

گزشتہ مالی سال کی پہلی سہ ماہی میں سعودی عرب میں مقیم  پاکستانیوں نے 1.566 ارب ڈالر کا زرمبادلہ  ملک ارسال کیا تھا۔

ستمبر 2020ء میں سعودی عرب میں مقیم پاکستانیوں نے 665.82 ملین ڈالر کا زرمبادلہ ملک ارسال کیا جبکہ ستمبر2019ء میں سعودی عرب میں مقیم پاکستانیوں نے 515.75 ملین ڈالر کا زرمبادلہ پاکستان بھیجا۔

موجودہ حکومت کی جانب سے منی لانڈرنگ کے خاتمے اور قانونی ذرائع سے بیرون ممالک سے رقوم کی منتقلی کیلئے اقدامات کے نتیجے میں سمندر پار مقیم پاکستانیوں کی جانب سے ترسیلات زر میں گذشتہ مالی سال کے مقابلے میں نمایاں اضافہ دیکھنے میں آ رہا ہے۔

حکومت نے اقتصادی صورتحال کو بہتر بنانے کیلئے جو پالیسی ترتیب دی اس میں منی لانڈرنگ کا خاتمہ، درآمدات میں کمی اور برآمدات و ترسیلات زر میں اضافہ پر خصوصی توجہ مرکوز کی گئی ہے۔

سٹیٹ بینک آف پاکستان کے اعدادوشمارکے مطابق رواں مالی سال کے دوران بیرون ممالک مقیم پاکستانیوں کی جانب ترسیلات زر میں گزشتہ مالی سال کے مقابلے میں مجموعی طور پر 31.08 فیصد اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here