’اسلام آباد میں ترقیاتی منصوبوں پر 55 ارب روپے خرچ ہوں گے‘

وزیراعظم زیر صدارت نیشنل کوآرڈینیشن کمیٹی برائے ہائوسنگ، کنسٹرکشن اینڈ ڈویلپمنٹ کے ہفتہ وار اجلاس میں چیئرمین سی ڈی اے کی بریفنگ، عمران خان کا لاہورمیٹرو کے حوالے سے پنجاب حکومت کے نئے معاہدے پر اطمینان کا اظہار

81

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے لاہور میٹرو منصوبے کے حوالے سے حکومت پنجاب کی جانب سے کئے جانے والے بہتر معاہدے پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ موجودہ حکومت شفاف معاہدوں اور عوام کی ایک ایک پائی کا مناسب استعمال یقینی بنانے کے لئے پرعزم ہے۔

گزشتہ روز وزیر اعظم کی زیر صدارت نیشنل کوآرڈینیشن کمیٹی برائے ہائوسنگ، کنسٹرکشن اینڈ ڈویلپمنٹ کا ہفتہ وار اجلاس ہوا جس میں وزیرِ اطلاعات شبلی فراز، معاون خصوصی ملک امین اسلم، گورنر سندھ عمران اسمعیل، معاونین خصوصی لیفٹنٹ جنرل (ر) عاصم سلیم باجوہ، ڈاکٹر شہباز گل، گورنر سٹیٹ بنک رضا باقر، چیئرمین نیا پاکستان ہائوسنگ اتھارٹی لیفٹنٹ جنرل (ر) انور علی حیدر، و دیگر سینئر افسران شریک ہوئے جبکہ صوبائی چیف سیکرٹری صاحبان نے ویڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شرکت کی۔

چیئرمین سی ڈی اے نے وزیرِاعظم کو وفاقی دارالحکومت میں جاری ترقیاتی منصوبوں، گذشتہ دو نیلامیوں،اسلام آباد کے ماسٹر پلان کو از سرنو مرتب کرنے کے حوالے سے پیش رفت اور تعمیراتی سرگرمیوں کے فروغ سے متعلق اقدامات سے آگاہ کیا۔

چیئرمین سی ڈی اے نے بتایا کہ گذشتہ دو نیلامیوں (جولائی اور ستمبر) میں سی ڈی اے نے 55 ارب روپے اکٹھے کیے ہیں جو وفاقی دارالحکومت کے مختلف ترقیاتی منصوبوں کے لئے بروئے کار لائے جائیں گے۔

مکمل شدہ منصوبوں کے حوالے سے بتایا گیا کہ پارک انکلیو بریج، برما بریج، جی سیون، جی ایٹ انڈر پاس منصوبہ اور پیدل چلنے والوں کے لئے مختلف بریج اور کیپیٹل ہسپتال میں اضافی بلاک تعمیر کرنے کے منصوبے مکمل کیے جا چکے ہیں۔

اجلاس کو بتایا گیا کہ اسلام آباد اور راولپنڈی کی صاف پانی کی ضروریات کو پورا کرنے کے لئے غازی بروتھا سے پانی کی فراہمی کا منصوبہ شروع کر دیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ روات بہارہ کہو رنگ روڈ تعمیر کے منصوبے پر غور کیا جا رہا ہے۔ وفاقی دارالحکومت میں گرین ایریاز کے تحفظ کے لئے کیے جانے والے اقدامات پر بھی بریفنگ دی گئی۔

چیف سیکرٹری سندھ نے بتایا کہ 3.8 ملین مربع فٹ پر تعمیرات کے 19 منصوبوں کی منظوری دی جا چکی ہے جبکہ 4.2 ملین مربع فٹ پر تعمیرات کے منصوبوں کی منظوری کا عمل زیر غور ہے۔

چیف سیکرٹری پنجاب نے بتایا کہ 7.49ملین مربع فٹ پر تعمیرات کے منصوبوں کی منظوری دی جا چکی ہے جبکہ 12.07 ملین مربع فٹ کی تعمیرات کے منصوبوں کی منظوریوں کا عمل زیر غور ہے جسے مقررہ مدت میں مکمل کر لیا جائے گا۔

لاہور میٹرو منصوبے کے حوالہ سے اجلاس کو بتایا گیا کہ گذشتہ دورِ حکومت میں میٹرو کا معاہدہ 364 روپے فی کلومیٹر کے حساب سے کیا گیا جبکہ موجودہ دور میں جبکہ ڈالر کی قیمت بھی بڑھی ہے، یہ معاہدہ 304 روپے فی کلومیٹر کے حساب سے کیا گیا ہے۔ اس طرح فی کلومیٹر 60 روپے بچت کی گئی ہے جس کے نتیجہ میں سالانہ 287 ملین روپے اور 8 سالوں میں 2.29 ارب روپے بچت ہو گی۔

وزیرِاعظم نے حکومت پنجاب کی جانب سے کئے جانے والے بہتر معاہدے پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ موجود حکومت شفاف معاہدوں اور عوام کی ایک ایک پائی کا مناسب استعمال یقینی بنانے کے حوالے سے پرعزم ہے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here