وزیراعظم کا سمال اینڈ میڈیم انٹرپرائزز کیلئے دو ہفتوں میں قابل عمل روڈ میپ تیار کرنے کا حکم

حکومت تعمیرات اور ایس ایم ایز کے فروغ پر خصوصی توجہ دے رہی ہے، اس سلسلے میں نہ صرف رکاوٹیں دور کی جائیں گی بلکہ تمام ممکنہ مراعات بھی فراہم کی جائیں گی، نیشنل کوآرڈینیشن کمیٹی برائے سمال اینڈ میڈیم انٹرپرائزز کے اجلاس سے خطاب

155

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروباروں کے حوالے سے وزارتِ صنعت و پیداوار کو آئندہ دو ہفتوں میں قابل عمل روڈ میپ تیار کرنے کا حکم دیا ہے۔

 وہ نیشنل کوآرڈینیشن کمیٹی برائے سمال اینڈ میڈیم انٹرپرائزز کے اجلاس کی صدارت کر رہے تھے۔ اجلاس میں وزیر برائے صنعت محمد حماد اظہر، وزیر اطلاعات سینیٹر شبلی فراز، مشیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ، گورنر سٹیٹ بنک، چیئرمین ایف بی آر، متعلقہ وزارتوں کے سیکرٹری صاحبان و دیگر سینئر افسران شریک تھے۔

چھوٹی اور درمیانے درجے کی صنعتوں کے حوالے سے مجوزہ ایس ایم ای پالیسی 2020ء وزیر اعظم کو پیش کی گئی۔ وزیرِ اعظم کو مجوزہ پالیسی کے خدوخال پر تفصیلی بریفنگ دی گئی۔ پالیسی اقدامات کے ذریعے ایس ایم ای شعبے کے فروغ اور معیشت میں ایس ایم ایز کے کردار کو مزید مستحکم کرنے کے حوالے سے مختلف اقدامات کی نشاندہی کی گئی۔

وزیرِ اعظم عمران خان نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ایس ایم ایز ملکی معیشت کے استحکام و فروغ میں کلیدی کردار ادا کرتی ہیں، چھوٹے اور درمیانے درجے کی صنعتوں کو ماضی میں نظر انداز کیا جاتا رہا۔

انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت تعمیرات اور ایس ایم ایز کے فروغ پر خصوصی توجہ دے رہی ہے۔ وزیرِ اعظم نے ہدایت کی کہ ایس ایم ایز کو سہولیات اور مراعات کی فراہمی کے حوالے سے بین الاقوامی بہترین طریقہ کار سے استفادہ کیا جائے۔

وزیر اعظم نے اس امر کا اعادہ کیا کہ ایس ایم ایز کے فروغ کے لئے نہ صرف تمام رکاوٹیں دور کی جائیں گی بلکہ تمام ممکنہ مراعات فراہم کی جائیں گی۔ اس حوالے سے وزیرِ اعظم نے وزارتِ صنعت و پیداوار کو آئندہ دو ہفتوں میں قابل عمل روڈ میپ کی تیاری کی ذمہ داری سونپی ہے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here