ایف بی آر نے 1.4 ارب روپے کی منی لانڈرنگ پکڑ لی

121

اسلام آباد: فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) نے 1.4 ارب روپے کی منی لانڈرنگ پکڑ لی۔

ترجمان ایف بی آر نے بتایا کہ ڈائریکٹوریٹ جنرل انٹیلی جنس اینڈ انویسٹی گیشن اسلام آباد نے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کے نکات کی تعمیل اور حکومت اور چیئرمین ایف بی آر کی ہدایات پر منی لانڈرنگ کی روک تھام کے لئے موثر کاروائی کا آغاز کر دیا ہے۔

اس سلسلے میں ڈائریکٹوریٹ جنرل انٹیلی جنس اینڈ انوسٹی گیشن اسلام آباد نے مشکوک بینک ٹرانزیکشن کی بناء پر مشکوک افراد کے خلاف کارروائی کی ہے۔

مشکوک شخص کی ٹیکس پروفائل سے معلوم ہوا ہے کہ وہ مختلف کاروباری ناموں سے خدمات فراہم کر رہا تھا۔ مزید برآں مشکوک شخص 1.1 ارب روپے کی بینک ٹرانزیکشنز اور آمدن ذرائع کے بارے میں تسلی بخش جواب نہیں دے سکا۔

مشکوک شخص کے ایک اور ساتھی کے 329 ملین روپے کی مشکوک بینک ٹرانزیکشن کا پتہ چلا ہے۔ دونوں افراد مل کر کام کر رہے تھے اور ان کے 50 سے زیادہ ملکی و غیر ملکی بینک اکاﺅنٹس ہیں جن میں 1.4 ارب روپے کی مشکوک بینک ٹرانزیکشنز ہوئی ہیں۔

دونوں افراد کے خلاف اینٹی منی لانڈرنگ ایکٹ 2010ء کے سیکشن 8 کے تحت شکایت درج کر دی گئی ہے۔ ایک اور کاروائی میں پشاورمیں ایک چھاپے میں جعلی اور نان ڈیوٹی پیڈ سگریٹ کے 80 کارٹن پکڑ لئے گئے ہیں۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here