واپڈا کے پن بجلی گھروں کی پیداوار ملکی تاریخ میں پہلی بار ساڑھے 8 ہزار میگاواٹ کی حد عبور کر گئی

180

اسلام آباد: واپڈا کے پن بجلی گھروں کی پیداوار ملک کی تاریخ میں پہلی بار ساڑھے 8 ہزار میگاواٹ کی حد عبور کر گئی۔

گزشتہ روز پیک آورز کے دوران واپڈا پن بجلی گھروں سے نیشنل گرڈ کو 8 ہزار 757 میگاواٹ بجلی مہیا کی گئی۔ اِس سے قبل پیک آورز کے دوران قومی گریڈ کو زیادہ سے زیادہ بجلی فراہم کرنے کا ریکارڈ 8 ہزار 474 میگاواٹ تھا جو گزشتہ سال 11 ستمبر کو قائم ہوا تھا۔

جمعرات کو جاری واپڈا اعلامیہ کے مطابق تربیلا اور منگلا کے آبی ذخائر میں پانی کی بلند سطح، ارسا کی ہدایت پر آبی ذخائر سے پانی کے زیادہ اخراج اور واپڈا پن بجلی گھروں کا موثر آپریشن پیک آورز کے دوران پن بجلی کی اِس ریکارڈ ساز پیداوار کی بنیادی وجوہات ہیں۔

اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ روز پیک آورز کے دوران تربیلا ہائیڈل پاور سٹیشن سے نیشنل گرڈ کو 3331 میگاواٹ بجلی فراہم کی گئی۔

تربیلا چوتھے توسیعی پن بجلی گھر سے 1410 میگاواٹ، غازی بروتھا سے 1450 میگاواٹ، نیلم جہلم ہائیڈل پاور سٹیشن سے 870 میگاواٹ اور منگلا ہائیڈل سٹیشن سے 915 میگاواٹ بجلی مہیا کی گئی جبکہ باقی 781 میگاواٹ بجلی واپڈا کے دیگر پن بجلی گھروں سے مجموعی طور پر نیشنل گرڈ کو فراہم کی گئی۔

واپڈا کے پن بجلی گھروں کی تعداد 22 ہے جن کی مجموعی پیداوار 9 ہزار 389 میگاواٹ ہے۔ اِس وقت واپڈا دیامر بھاشا ڈیم، داسو ہائیڈرو پاور پراجیکٹ اور مہمند ڈیم کے تین بڑے منصوبوں پر کام کر رہا ہے جن کی تکمیل پر واپڈا پن بجلی کی پیداوار ی صلاحیت میں مزید ساڑھے 9 ہزار میگاواٹ اضافہ ہو جائے گا۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here