مالی سال 2019-20ء: خدمات کے شعبہ میں تجارتی خسارہ میں 42.96 فیصد اضافہ

پاکستان کے تجارتی خسارہ میں جاری مالی سال کے پہلے مہینہ میں 10.24 فیصد کمی آئی، پاکستان بیورو برائے شماریات

107

اسلام آباد: خدمات کے شعبہ میں تجارتی خسارہ میں گزشتہ مالی سال کے دوران 42.96 فیصدکانمایاں اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔ اس عرصہ میں خدمات کی برآمدات میں 8.6 فیصد اور درآمدات میں 24.25 فیصد کمی ریکارڈ کی گئی۔

پاکستان بیورو برائے شماریات (پی بی ایس) کے اعدادوشمارکے مطابق مالی سال 2019-20ء میں خدمات کے شعبہ کی برآمدات کا حجم 5.449 ارب ڈالر رہا، پیوستہ مالی سال میں اس شعبہ کی برآمدات کا حجم 5.966 ارب ڈالر ریکارڈ کیا گیا تھا۔

اسی طرح گزشتہ مالی سال میں خدمات کے شعبہ کی درآمدات کا حجم  8.28 ارب ڈالررہا،  پیوستہ مالی سال میں اس شعبہ کی درآمدات کا حجم 10.936 ارب ڈالر ریکارڈ کیا گیا تھا۔

مالی سال 2019-20ء میں خدمات کے شعبہ کا تجارتی خسارہ 2.834 ارب ڈالر رہا۔ پیوستہ مالی سال میں اس شعبہ کا تجارتی خسارہ 4.9 ارب ڈالررہا تھا۔

دریں اثناء پاکستان کے تجارتی خسارہ  میں جاری مالی سال کے پہلے مہینہ (جولائی) میں 10.24 فیصد کمی آئی، جولائی 2020ء میں ملک کا تجارتی خسارہ 1.64 ارب ڈالررہا، گزشتہ سال جولائی میں ملک کا تجارتی خسارہ 1.82 ارب ڈالر ریکارڈ کیا گیا تھا۔

 مالی سال کے پہلے ماہ میں ملکی برآمدات کا حجم دو ارب ڈالر ریکارڈ کیا گیا، جو گزشتہ مالی سال کے اسی عرصہ کے مقابلے میں 6.04 فیصد زیادہ ہے۔

گزشتہ مالی سال کے پہلے ماہ (جولائی 2019ء) میں ملکی برآمدات کا حجم 1.886 ارب ڈالر ریکارڈ کیا گیا تھا۔ اسی طرح اس عرصہ میں درآمدات میں کمی کا تناسب 1.97 فیصد ریکارڈ کیا گیا ہے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here