تین ماہ بعد بھی تعمیراتی صنعت کے مراعاتی پیکج کا نوٹی فکیشن جاری نہ ہو سکا

نوٹی فکیشن جاری نہ ہونے سے تعمیراتی شعبے سے وابستہ کاروباری طبقے کو تشویش لاحق، حکومت مراعاتی پیکیج پر عملدرآمد کیلئے جلد از جلد نوٹیفیکیشن جاری کرے: اسلام آباد چیمبر

234

اسلام آباد: اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری (آئی سی سی آئی) کے صدر محمد احمد وحید نے کہا ہے کہ حکومت نے ملک میں سرمایہ کاری اور معاشی سرگرمیوں کو فروغ دینے کیلئے کنسٹریکشن انڈسٹری کیلئے مراعاتی پیکیج کا اعلان کیا تھا لیکن تین ماہ گزرنے کے باوجود ابھی تک کسی ادارے نے اس پیکج پر عمل درآمد کیلئے نوٹیفیکیشن جاری نہیں کیا۔

انہوں نے کہا کہ نوٹی فکیشن جاری نہ ہونے کی وجہ سے تعمیراتی شعبے سے وابستہ کاروباری طبقے کو تشویش لاحق ہے کیونکہ نوٹی فیکیشن کے بغیر ان کیلئے مستقبل کی منصوبہ بندی کرنا ممکن نہیں۔

احمد وحید نے مطالبہ کیا کہ حکومت اس صورتحال کا نوٹس لے اور کنسٹریکشن انڈسٹری کے مراعاتی پیکج کوعملی جامہ پہنانے کیلئے تمام متعلقہ محکموں کو فوری نوٹیفیکیشن جاری کرنے کے احکامات جاری کرے۔

ایک بیان میں محمد احمد وحید نے کہا کہ سی ڈی اے نے تین برس پہلے انڈسٹریل بلڈنگ بائی لاز میں ترمیم کی بورڈ سے منظوری لی تھی لیکن ابھی تک ان کا نوٹی فیکیشن جاری نہیں ہو سکا جس وجہ سے نہ صرف اسلام آباد میں صنعتی ترقی کا عمل متاثر ہو رہا ہے بلکہ سی ڈی اے کو بھی ریونیو میں نقصان ہو رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ تاجر برادری کو سی ڈی اے سے لیز کی تجدید سمیت دیگر امور میں بھی مسائل کا سامنا ہے جس وجہ سے کاروباری سرگرمیاں متاثر ہو رہی ہیں، انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ سی ڈی اے ترمیم شدہ بلڈنگ بائی لاز اور کنسٹریکشن انڈسٹری پیکج پر عمل درآمد کیلئے فوری نوٹی فیکیشن جاری کرے تا کہ اسلام آباد میں کاروباری اور تعمیراتی سرگرمیوں کو بہتر فروغ ملے۔

آئی سی سی آئی کے صدر نے کہا کہ کنسٹرکشن انڈسٹری معیشت کی ترقی میں کلیدی کردار اد اکرتی ہے کیونکہ اس انڈسٹری سے منسلک پچاس سے زائد ذیلی صنعتوں کا کاروبار اس صنعت سے وابستہ ہے۔ تعمیراتی سرگرمیوں کو فروغ ملنے سے کاروبار کو ترقی ملے گی، سرمایہ گردش کرے گا، ہزاروں افراد کو روزگار ملے گا جس سے غربت و بے روزگاری کم ہو گی جبکہ پاکستان ہائوسنگ پرگرام کے تحت گھروں کی تعمیر سے کم آمدن والے افراد کو اپنی چھت ملے گی۔

اسلام آباد چیمبرآف کامرس اینڈ انڈسٹری کے سینئر نائب صدر طاہر عباسی اور نائب صدر سیف الرحمٰن خان نے کہا کہ کورونا وائرس کی تباہ کاریوں کی وجہ سے کاروباری اور صنعتی سرگرمیاں بہت متاثر ہوئی ہیں، ان حالات میں کنسٹرکشن انڈسٹری کو فروغ دے کر کاروباری سرگرمیوں کو بحال کیا جا سکتا ہے۔

ضرورت اس بات کی ہے کہ پنجاب کی طرز پر وفاقی حکومت کے متعلقہ ادارے تعمیراتی صنعت کے پیکج پر عمل درآمد کیلئے نوٹیفیکیشن جاری کریں اور اس صنعت کی سہولت کیلئے ٹائم لائن مقرر کریں تا کہ اس شعبے میں سرمایہ کاری کی حوصلہ افزائی ہو جس سے بہت سی دیگر صنعتوں اور کاروباری اداروں کا کاروبار چلے گا۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here