چیف ایگزیکٹو آفیسر شیل ہارون رشید او آئی سی سی آئی کے نئے صدر منتخب

77

کراچی: شیل پاکستان لمیٹڈ کے چیف ایگزیکٹو آفیسر(سی ای او) ہارون رشید کو یکم جولائی سے اوورسیز انویسٹرز چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری (او آئی سی سی آئی) کا صدر تعینات کردیا گیا ہے۔ 

ہارون رشید کی تعیناتی او آئی سی سی آئی کے سابق صدر شہزاد دادا کے استعفے کے بعد کی گئی۔ سابق او آئی سی سی آئی کے سابق صدر نے اس سے قبل یونائیٹڈ بینک لمیٹڈ کے صدر کے طور پر چارج سنبھالنے کے بعد سٹینڈرڈ چارٹرڈ بینک سے استعفیٰ دیا تھا۔

مزید برآں، میزان بینک کے صدر اور چیف ایگزیکٹو آفیسر(سی ای او) عرفان صدیقی کو بھی یکم جولائی سے او آئی سی سی آئی کا نائب صدر تعینات کردیا گیا ہے۔ عرفان صدیقی کو 1997 میں المیزان انویسٹمنٹ بینک کی تشکیل کا سبب جانا جاتا ہے، تاہم مئی 2002 میں مذکورہ بینک کو مکمل طور پر اسلامک کمرشل بینک میں تبدیل کیا گیا تھا۔

یہ بھی پڑھیے: آئی ٹی کمپنی سسٹمز لمیٹڈ نے آصف اکرم کو نیا سی او او تعینات کر دیا

او آئی سی سی آئی کے صدر تعینات ہونے سے متعلق اظہارِ خیال کرتے ہوئے ہارون رشید نے کہا کہ “او آئی سی سی آئی جیسی آرگنائزیشن کا صدر منتخب ہونا میرے لیے اعزاز کی بات ہے، جو معاشی کنٹری بیوشن کے اعتبار سے ملک کا سب سے بڑا چیمبر ہے جو تمام سرکاری محصولات میں سے ایک تہائی سے زیادہ کنٹری بیوشن کرتا ہے اور یہ ملک میں سب سے بڑا غیرملکی سرمایہ کار بھی ہے”۔

انہوں نے کہا کہ “او آئی سی سی آئی کے اراکین اس بات سے یقینی طور پر واقف ہیں تمام تر حفاظتی تدابیر کو اپناتے ہوئے معیشت کا پیہ چلانے اور کاروباری سرگرمیوں کو جاری رکھنے کی ضرورت ہے”۔

“او آئی سی سی آئی پاکستان کی معاشی اور سرمایہ کاری صلاحیت پر یقین رکھتی ہے جو مستقبل کی پالیسیوں اور ان پر جلدی سے عملدرآمد کرنے سے پاکستان کو مقامی سرمایہ کاروں اور غیرملکی ممالک کے مابین سب سے زیادہ امید افزا ہے”۔

ہارون رشید شیل پاکستان لمیٹڈ کے حالیہ چیف ایگزیکٹو اور مینجنگ ڈائریکٹر ہیں، جہاں وہ 2011 سے بورڈ کے ڈائریکٹر ہیں۔ انہوں نے لمز یونیورسٹی سے گریجوایشن مکمل کرنے کے بعد 1995 میں شیل میں شمولیت اختیار کی تھی۔

ہارون پاکستان، برطانیہ اور سنگاپور میں بڑے عہدوں پر فائز رہ چکے ہیں اور سیلز، مارکیٹنگ، ٹریڈنگ، سپلائی، ایوی ایشن اور ڈاؤن سٹریم کنسلٹینسی کی سینئر لیڈرشپ کا کردار ادا کرچکے ہیں۔

ریٹیل سیلز، نان فیولز ریٹیلنگ اور نیٹ ورک پلاننگ میں 1995 سے 2000 تک خدمات کے بعد انہوں نے 2001 میں INSEAD سے ایم بی اے مکمل کیا، جہاں انہوں نے لندن میں ڈاؤن سٹریم مینجمنٹ میں بطور کنسلٹنٹ کے دوبارہ سے شیل میں شمولیت اختیار کی۔

2005 میں سی ای او شیل لندن میں بطور ڈاؤن سٹریم کمپیٹیٹر انٹیلی جنس مینجر تعینات ہوئے  جبکہ 2008 کو ترقی پا کر سنگاپور میں ایوی ایشن کے لیے گلوبل مارکیٹنگ مینجر کے عہدے پر فائز ہوئے۔

پاکستان واپس آنے کے بعد 2011 میں انہیں مشرقِ وسطیٰ اور جنوبی ایشیا کے خطے کا سپلائی چین اور ڈسٹری بیوشن کا جنرل مینجر مقرر کیا گیا، 2016 میں ہارون رشید کو لبریکنٹس کا جنرل مینجر منتخب کیا گیا۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here