کورونا کیخلاف اقدامات، پاکستان کے 1.5 ارب ڈالر قرض کے معاہدوں پر دستخط

معاہدے عالمی بینک، ایشیائی ترقیاتی بینک اور ایشیئن انفراسٹرکچر ڈویلپمنٹ بینک کے ساتھ طے پائے، مقصد کورونا وائرس کے خلاف اقدامات کرنا، صحت اور تعلیم کے شعبے کو بہتر بنانا ہے

177

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کی موجودگی میں حکومت پاکستان اور تین بین الاقوامی مالیاتی اداروں کے درمیان 1.5 ارب ڈالر کے مالیاتی معاہدوں پر دستخط کر دیئے گئے، یہ معاہدے عالمی بینک، ایشیائی ترقیاتی بینک اور ایشیئن انفراسٹرکچر ڈویلپمنٹ بینک کے ساتھ طے پائے ہیں جن کا مقصد کورونا وائرس کے خلاف اقدامات کرنا، صحت اور تعلیم کے شعبے کو بہتر بنانا ہے۔

ایشیائی ترقیاتی بینک کوویڈ 19 ایکٹو رسپانس اینڈ ایکسپینڈیچر سپورٹ پروگرام کےلئے 500 ملین ڈالر کی مالی معاونت فراہم کرے گا، اس کا مقصد حکومت پاکستان کو صحت کے نظام کو مضبوط بنانے اور کورونا وباء کے سماجی و معاشی اثرات میں کمی لانے کی کوششوں میں تعاون فراہم کرنا ہے۔

اسی طرح ایشین انفراسٹرکچر انویسٹمنٹ بینک بھی کوویڈ 19 ایکٹو رسپانس اینڈ ایکسپینڈیچر سپورٹ پروگرام کےلئے 500 ملین ڈالر کی معاون فنانسنگ فراہم کر رہا ہے، اس کا مقصد کورونا وباء کے اثرات پر قابو پانے کی حکومتی کوششوں میں تعاون فراہم کرنا ہے۔

اس کے علاوہ انسانی وسائل کی ترقی کےلئے ضروری صحت وتعلیم کے نظام کو مضبوط بنانے، معاشی پیداوار میں خواتین کے کردار کی حوصلہ افزائی اور سماجی تحفظ کے منصوبوں میں کی بہتری میں معاونت کے سلسلے میں سیکورنگ ہیومین انویسٹمنٹس ٹو فاسٹر ٹرانسفارمیشن (شفٹ) کےلئے 500 ملین ڈالر کے معاہدے پر بھی دستخط کیے گئے۔

حکومت پاکستان کی جانب سے سیکرٹری اقتصادی امور نور احمد جبکہ عالمی بنک کے کنٹری ڈائریکٹر پچھاموتھو ایلانگوان اور ایشیائی ترقیاتی بینک کی کنٹری ڈائریکٹر مس شیاﺅ ہونگ نے معاہدوں پر دستخط کئے۔ یہ رقم آئندہ چند دنوں میں پاکستان کو فراہم کر دی جائے گی۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here