چینی سکینڈل کیس: عدالت کی کاشتکاروں کے فریق بننے کی حمایت، اگلی سماعت 19 جون کو ہو گی

242

اسلام آباد: اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اﷲ کی عدالت نے شوگر ملز ایسوسی ایشن اور 17 شوگر ملز کی طرف سے شوگر ملز تحقیقات کے خلاف کیس جمعہ کو مقرر کرنے کی ہدایت کر دی۔

پیر کو رحیم یار خان سے گنے کے کاشتکار کی شوگر ملز کیس میں فریق بننے کی درخواست پر سماعت کے دوران وفاق نے گنے کے کاشتکار کی کیس میں فریق بننے کی حمایت کر دی۔

چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ چینی 70 روپے فروخت کرنے کا کیا بنا؟ جس پر ایڈیشنل اٹارنی جنرل طارق کھوکھرنے کہاکہ خط و کتابت جاری ہے لیکن مارکیٹ میں چینی 70 روپے کلو دستیاب نہیںجس پر چیف جسٹس نے کہا کہ پھر تو بات ہی ختم ہو گئی، حکم امتناع تو چینی کی قیمت کم کرنے سے مشروط تھا۔

اس موقع پر ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے استدعا کی کہ مرکزی کیس آئندہ جمعہ کو مقرر کیا جائےجس پر چیف جسٹس نے کہا کہ مشروط حکم امتناع پر عمل نہیں ہوا تو کیس جمعہ کےلئے مقرر کر دیتے ہیں۔

ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے کہا کہ تو پھر کیا حکم امتناع ختم ہو گیا؟ جس پر چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے ریمارکس دئیے کہ جب مشروط حکم امتناع پر عمل ہی نہیں ہوا تو پھر حکم امتناع کیسا؟ عدالت اس طرح قیمتوں کا تعین تو نہیں کر سکتی ہے۔ یہ تو ایگزیکٹو کا کام ہے۔عدالت نے جمعہ 19 جون کو شوگر ملز ایسوسی ایشن کا کیس مقرر کرنے کی ہدایت کردی۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here