ڈبلیو ایچ او کا وباؤں سے نمٹنے کیلئے نیا ادارہ تشکیل

181

جینوا: عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) نے کورونا وائرس اور دوسری ممکنہ عالمگیر وباؤں سے نمٹنے اور سرمائے کی فراہمی یقینی بنانے کے لیے ایک نیا ادارہ ڈبلیو ایچ او فاؤنڈیشن تشکیل دیا ہے۔

ڈبلیو ایچ او کے ڈائریکٹر جنرل ٹینڈروس اڈہانوم گیبریس نے یہ بات گزشتہ روز جنیوا میں ایک نیوز کانفرنس میں کہی۔

ٹینڈروس نے کہا کہ عالمی ادارے کے اخراجات کا 80 فیصد سے زائد حصہ رکن ممالک اور دیگر افراد کے عطیات سے پورا ہوتا ہے، عطیات کے ذریعے فراہم کیا جانے والا سرمایہ عموماً مخصوص منصوبوں کے ساتھ منسلک ہوتا ہے اور رقوم خرچ کرنے کے لیے ادارے کا صوابدیدی اختیار بہت کم ہوتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ عالمی ادارہ صحت کی مستقبل کی کامیابی اسے عطیات فراہم کرنے والوں کی تعداد بڑھانے اور مالیت و معیار دونوں لحاظ سے اس کے صوابدیدی اختیار میں اضافے پر منحصر ہے، نیا ادارہ رکن ممالک کے ساتھ ساتھ دنیا بھر کے شہریوں سے عطیات وصول کرے گا۔

اس سے قبل امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے 18 مئی کو جاری کردہ ایک خط میں کہا تھا کہ عالمی ادارہ صحت کی جانب سے 30 روز کے اندر اندر کورونا وائرس کے اثرات بچاؤ بارے اصلاحات شروع نہ کیے جانے کی صورت میں ان کی انتظامیہ، ادارے کو سرمائے کی فراہمی مستقل روک دے گی۔ واضح رہے کہ امریکہ، ڈبلیو ایچ او کو سب سے زیادہ فنڈز دینے والا ملک ہے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here