سرمایہ کاروں کے تحفظ کیلئے پاکستان سٹاک ایکسچینج رسک مینجمنٹ کی پالیسی پر عمل پیرا ہے،  ایم ڈی 

رواں سال جنوری سے لے کر اب تک پالیسی کے نفاذ کے بعد مارکیٹ میں 9 مرتبہ کاروبار معطل کیا گیا: فرخ حسین

206

 اسلام آباد: پاکستان سٹاک ایکس چینج (پی ایس ایکس) کے منیجنگ ڈائریکٹر اور سی ای او فرخ حسین نے کہا ہے کہ پی ایس ایکس رسک مینجمنٹ کی بہترین پالیسی پر عمل پیرا ہے تاکہ سرمایہ کاروں کے تحفظ کے ساتھ ساتھ سٹاک مارکیٹ کی کارکردگی میں تسلسل کا عمل جاری رہے۔ رواں سال جنوری سے لے کر اب تک پالیسی کے نفاذ کے بعد مارکیٹ میں 9 مرتبہ کاروبار معطل کیا گیا۔

ایک انٹرویو میں فرخ حسین نے کہا کہ کاروبار کی معطلی عالمی سطح پر کئے جانے والے اقدامات کا ہی حصہ ہے تاکہ سرمایہ کاروں کے تحفظ کے ساتھ ساتھ سٹاک مارکیٹ میں کام کے تسلسل کو جاری رکھا جا سکے۔

انہوں نے واضح کیا کہ اس طرح کے اقدامات پریشان کن نہیں ہیں۔ جب مختلف مواقع پر کے ایس ای میں پانچ فیصد سے زائد شرح سے گراوٹ آ رہی تھی تو آٹھ مرتبہ کاروبار معطل کیا گیا جبکہ ایک مرتبہ پانچ فیصد سے زیادہ کی بہتری کے باعث ایسا کیا گیا ہے۔ مارکیٹ کو عدم استحکام سے بچانے کے لئے کاروبار کی معطلی ضروری ہے جس سے سرمایہ کاروں کو بہترین فیصلے کرنے میں مدد اور وقت ملتا ہے۔

کووڈ 19 کی عالمی وباء کے تناظر میں علاقائی اور عالمی سٹاک مارکیٹ کے بارے میں انہوں نے کہا کہ پی ایس ایکس کی انتظامیہ نے وباء سے قبل اپنی ذمہ داری سنبھالی جس کے بعد مارکیٹ کے استحکام کے لئے متعدد اقدامات کئے گئے۔ وباء کے عبد لاک ڈاؤن سے قبل بھی کئی حفاظتی اقدامات کئے گئے جس کے تحت سٹاف کی حاضری میں 50 فیصد کمی سمیت دیگر حفاظتی اقدامات کو بھی یقینی بنایا گیا ہے۔

ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ وباء کے باعث جب مندی کا رجحان ہے تو یہ وقت طویل مدت کی سرمایہ کاری کے لئے موزوں ہے جس سے بہترین شرح پر منافع حاصل کیا جا سکتا ہے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here