پی آئی اے کو پہلی بار امریکا تک براہ راست پروازیں چلانے کی اجازت

براہ راست پروازوں کا مقصد کورونا وائرس کے باعثامریکہ میں پھنسے پاکستانیوں اور وہاں وفات پا جانے والوں کی متیوں کو واپس لانا ہے 

68

اسلام آباد: پاکستان انٹرنیشنل ائیر لائنز (پی آئی اے) کو تاریخ میں پہلی بار پاکستان سے امریکہ تک براہ راست پروازیں چلانے کی اجازت مل گئی ہے جس کے بعد اب پی آئی اے کی 12 فلائٹس براہ راست نیویارک جائیں گی۔

قومی ائیر لائن کی ان براہ راست پروازوں کا مقصد امریکہ میں پھنسے پاکستانیوں اور وہاں وفات پا جانے والوں کی متیوں کو واپس لانا ہے۔

گزشتہ ہفتے پی آئی اے کے چیف ایگزیکٹو آفیسر (سی ای او) ایئر مارشل ارشد ملک نے پاکستان میں امریکی سفارتخانے کو خط لکھا تھا جس میں انہوں نے کورونا وائرس کے باعث امریکہ میں پھنسے پاکستانیوں کو واپس لانے کے لیے خصوصی پروازیں چلانے کی اجازت مانگی تھی۔

واضح رہے کہ اس سے قبل پی آئی اے کی امریکہ کیلئے پروازیں یورپ یا برطانیہ کے ائیرپورٹس سے ہو کر سیکورٹی کلئیرنس کے بعد جاتی تھیں۔ یہ پروازیں لندن اور مانچسٹر، پیرس، شینن اور بارسلونا کے راستے امریکہ پہنچا کرتی تھیں۔

ترجمان پی آئی اے کے مطابق امریکہ تک براہ راست پروازوں کی اجازت ملک کی سکیورٹی صورتحال میں بہتری، حکومتی پالیسی اور پی آئی اے کے سکیورٹی سے متعلق اقدامات کی عکاس ہے۔

انھوں نے کہا کہ پی آئی اے امریکہ کی ریلیف پروازیں چلائے گا جہاں ہزاروں پاکستانی پی آئی اے کے منتظر ہیں اور پی آئی اے ان میتوں کو بھی بغیر کسی معاوضے واپس لے کر آئے گی جو دیار غیر میں چل بسے ہیں۔

سی ای او پی آئی اے ائیر مارشل ارشد ملک نے کہا کہ آخری پاکستانی کے وطن واپسی تک پی آئی اے کا یہ آپریشن جاری رہے گا۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here