کورونا وائرس: پاکستان میں 45 ہلاکتیں، مریضوں کی تعداد 2900 سے تجاوز کر گئی،171صحت یاب

ملک میں کورونا کیسز کی تعداد 50 ہزارتک پہنچنےکاخدشہ، حکومتی رپورٹ میں انکشاف، عالمی سطح پر اموات کی تعداد 59 ہزار سے تجاوز کرگئی

202

لاہور: پاکستان میں کورونا وائرس سے ہلاکتوں کی تعداد 45 تک جاپہنچی ہے جب کہ 112 مزید کیسز سامنے آنے کے بعد متاثرہ مریضوں کی مجموعی تعداد 2921 ہو گئی ہے۔وائرس کا شکار ہونے والے 171افراد اب تک صحت یاب ہو چکے ہیں۔

پاکستان میں اب تک کورونا سے ہونے والی ہلاکتوں میں سب سے زیادہ 15 ہلاکتیں سندھ میں ہوئی ہیں جب کہ پنجاب  میں12، خیبرپختونخوا میں 14، گلگت  بلتستان میں  تین اور بلوچستان میں ایک ہلاکت ہوئی ہے۔

گزشتہ روز وفاقی سیکرٹری وزارتِ نیشنل ہیلتھ کی سپریم کورٹ میں کورونا کیسوں کی تعداد سے متعلق رپورٹ کے بعد پنجاب میں کورونا وائرس کے تازہ کیسوں کی تعداد سامنے آئی ہے اور ایک ہی روز میں آج 64 شہریوں میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے جس سے پنجاب میں مذکورہ کیسز کی تعداد سب سے زیادہ 1197 ہو گئی ہے۔ جبکہ سندھ میں بھی آج 30 نئے کیس سامنے آنے کے نتیجے میں تعداد 869 ہو گئی ہے۔ خیبر پختونخوا میں بھی دو کیسز رپورٹ ہونے کے ساتھ تعداد 374 جبکہ گلگت بلتستان میں 13 نئے کیسز رپورٹ ہونے کے بعد یہ تعداد 206 ہو گئی ہے۔ اس کے علاوہ وفاقی دارلحکومت میں بھی تین نئے کیس رپورٹ ہونے سے تعداد 78 تک جا پہنچی ہے۔ اسکے علاوہ پنجاب، خیبرپختونخوا اور سندھ میں ایک ایک مریض کی زندگی کا خاتمہ ہو چکا ہے۔

یہی نہیں، پاکستان میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد صحتیاب بھی ہوئے ہیں پنجاب میں آج 19 مریض، گلگت بلتستان میں چار مریض اور آزاد کشمیر میں ایک مریض صحتیاب ہو کر متاثرہ افراد کو خوشی کا پیغام دے چکے ہیں۔

کورونا کیسز کی تعداد 50 ہزارتک پہنچنےکا خدشہ

حکومت نےکوروناوائرس سےبچاؤکے قومی ایکشن پلان کی رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کرادی جس میں رواں ماہ کے اختتام تک متوقع کیسز بارے بھی عدالت کو آگاہ کیا گیا ہے۔

رپورٹ میں انکشاف کیاگیاہےکہ پچیس اپریل تک کورونا کیسزکی تعداد پچاس ہزارتک پہنچنےکاخدشہ ہے۔جن میں سات ہزار کیسز سنگین نوعیت اور اڑھائی ہزار کے قریب کیسز تشویش ناک ہوسکتے ہیں۔

حکومتی رپورٹ میں بتایا گیا کہ 25 اپریل تک کورونا کےمصدقہ کیسز کی تعداد یورپ سےکم ہوگی،اور 25 اپریل تک وائرس کی ٹیسٹنگ سہولت میں اضافہ کیاجائےگا، 366 ملین امریکی ڈالرکی لاگت سے ایمرجنسی پلان کا اطلاق کردیا ہے۔

لاہور میں لاک ڈائون کیخلاف ورزی کرنے والوں سے سختی سے نمٹنے کا فیصلہ

صوبائی دارالحکومت لاہور میں صبح 8 بجے سے رات 8 بجے کی چھوٹ کے بعد باہر آنے والے شہریوں سے سختی سے نمٹنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

ایمبولینس، گڈز ٹرانسپورٹ، میڈیا، ڈاکٹرز اور پولیس کے علاوہ غیر ضروری افراد کو باہر نکلنے والوں کے خلاف دفعہ 144 کی کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

سی سی پی او لاہور کی جانب سے جاری ہدایت میں شہریوں سے کہا گیا ہے کہ وہ صبح 8 سے رات 8 کے درمیان اپنے ضروری کام نمٹا لیں، رات 8 بجے کے بعد شہری غیر ضروری طور پر گھروں سے باہر نہ نکلیں۔

سندھ کی مزید ٹیسٹنگ کٹس منگوانے کی منظوری

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کورونا ٹیسٹنگ کی استعداد بڑھانے کے لیے برطانیہ اور کینیڈا سے لاکھوں کٹس درآمد کرنے کی منظوری دیدی۔

وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی زیر صدارت کورونا وائرس سے متعلق اجلاس ہوا جس میں صوبائی وزیر صحت، سیکریٹری صحت اور سیکریٹری سرمایہ کاری سمیت دیگر حکام شریک ہوئے۔

وزیراعلیٰ سندھ کو بتایا گیا کہ کورونا کی 7500 ٹیسٹنگ کٹس موجود ہیں جو ایک ہفتے کے لیے کافی ہیں۔

وزیر صحت سندھ عذرا پیچوہو نے اجلاس میں بتایا کہ آئندہ تین دن میں 15 ہزار کٹس مزید آ جائیں گی۔مراد علی شاہ نے برطانیہ سے 2 لاکھ کٹس فوری درآمد کرنے کی ہدایت کر دی۔

طبی عملے کو ایک ماہ کی اضافی تنخواہ دینے کا اعلان

وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات  فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ حکومت ڈاکٹرز اور طبی عملے کو ایک ماہ کی اضافی تنخواہ دے گی۔

لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ کورونا کے خلاف ڈاکٹرز ہمارے سپاہی ہیں، کورونا کے خلاف جنگ میں ڈاکٹر اورپولیس صف اول میں کھڑے ہیں، ہم وبا کے خلاف برسر پیکار تمام اہلکاروں کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں، ڈاکٹرز اور طبی عملے کو ایک ماہ کی اضافی تنخواہ دینے کا فیصلہ کیا ہے۔

 چھوٹے جرائم میں ملوث ملزموں کو جیل نہ بھجوایا جائے

حکومت پنجاب نے جیلوں میں گرفتار قیدیوں کو کورونا سے مخفوظ رکھنے کے لیے پولیس اور عدلیہ کو خفیہ ہدایات جاری کر دیں۔

ذرائع کے مطابق ان ہدایات کا مقصد پنجاب میں کورونا وائرس کے پھیلاو کو روکنا اور خصوصاً جیلوں میں مقید قیدیوں کو اس وبا سے بچانا ہے۔

ہدایات میں کہا گیا ہے کہ چھوٹے جرائم میں ملوث ملزموں کو جیل نہ بھجوایا جائے اور صرف اہم و سنگین جرائم میں ملوث ملزمان ہی جیل بھجے جائیں۔

ذرائع کے مطابق  پنجاب کی 41 جیلوں میں اس وقت مختلف جرائم میں ملوث گرفتار قیدیوں کی تعداد 46 ہزار سے زائد ہے جنہیں پہلے ہی کورونا سے بچاو کے لیے مختلف اختیاطی تدابیر اختیار کی جارہی ہیں اور نئے قیدیوں کو دیگر قیدیوں میں شامل کرنے سے قبل انہیں قرنطینہ میں رکھاجا رہا ہے۔

عالمی صورت حال

 وائرس کوویڈ 19 سے عالمی سطح پر اموات کی تعداد 59 ہزار سے تجاوز کرگئی جبکہ وائرس سے اب تک 2 لاکھ 28 ہزار 223 مریض صحت یاب ہو چکے ہیں۔

وائرس نے امریکا میں 7402 سے زائد افراد کو شکار کرلیا ہے جب کہ 2 لاکھ 77 ہزار سے زائد متاثر ہو چکے ہیں، امریکا میں ہلاکتوں کا سلسلہ بدستور جاری ہے، اٹلی میں ہلاکتیں 14,681 ہو چکی ہیں جب کہ متاثرہ افراد کی تعداد 1 لاکھ 19 ہزار سے بڑھ گئی۔ اسپین بھی وائرس سے بری طرح متاثر ہے جہاں روزانہ کی بنیاد پر پانچ سو سے زائد اموات ہو رہی ہیں، اب تک اسپین میں 11,198 ہلاکتیں ہو چکی ہیں جب کہ متاثرہ افراد کی تعداد 1 لاکھ 19 ہزار سے زائد ہے۔

فرانس میں بھی وائرس کی ہلاکت خیزی میں تیزی آ گئی ہے، اب تک 6507 افراد وائرس کی بھینٹ چڑھ چکے ہیں جب کہ متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 64 ہزار سے زائد ہوگئی ہے۔ ایران بھی وائرس سے شدید متاثرہ ممالک میں سے ایک ہے جہاں 3,326 افراد ہلاک ہو چکے ہیں جب کہ 53,183 افراد متاثر ہیں۔ برطانیہ میں بھی ہلاکتیں بڑھ کر 3605 ہو گئی ہیں اور متاثرہ افراد کی تعداد 38 ہزار کا عندسہ عبور کرلیا ہے۔

جرمنی میں ہلاکتیں 1275 ہو گئیں، نیدرلینڈز میں 1487، بیلجیئم میں 1143، سوئٹزرلینڈ میں 591، ترکی میں 425 ہلاکتیں ہو چکی ہیں۔

چین میں ہلاکتوں کی تعداد 3,326 ہے۔ برازیل میں365، سوئیڈن میں 358 افراد کرونا وائرس سے ہلاک ہوئے، پرتگال میں 246، جنوبی کوریا میں 177، کینیڈا میں 208 ہلاک ہوئے، انڈونیشیا میں 181، آسٹریا میں 168، ڈنمارک میں 139، ایکواڈور میں 145، رومانیہ میں 133، فلپائن میں 136 جب کہ بھارت میں کرونا وائرس سے 72 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here