لاک ڈائون میں گھروں تک محدود پاکستانیوں کیلئے اوبر کی ڈیلیوری سروس شروع

447

اسلام آباد:  رائیڈ شیئرنگ سروس اوبر نے پہلی بار پاکستان میں اپنی ڈیلیوری سروس کو اسلام آباد اور لاہور میں متعارف کرا دیا ہے۔

کمپنی نے کہا ہے کہ یہ سروس کورونا وائرس کی وبا کے دوران گھروں تک محدود کروڑوں پاکستانیوں کی معاونت کیلئے متعارف کرائی گئی ہے۔

 کمپنی کی جانب سے جاری بیان کے مطابق پاکستان کے مختلف شہروں میں کوویڈ۔19 کے حوالہ سے حفاظتی اقدامات کے پیش نظر راشن، ادویات اور دیگر ضروری اشیا کو گھروں تک محدود شہریوں تک پہنچانے کی بہت زیادہ ضروروت ہے۔

یہ بھی پڑھیے: 

کریم کے حصول کے بعد کیا اوبر پاکستان میں رائیڈنگ سروس پر اپنی اجارہ داری قائم کر پائے گی؟

کورونا کے پیش نظرائیر لفٹ کا سروس 30 اپریل تک بند رکھنے کا اعلان

ٹیکسی سروس کریم کا کوررونا وائرس کے باعث ڈرائیورز کو ہیلتھ انشورنس، راشن دینے کا اعلان

اس مقصد کیلئے اوبر ڈیلیوری رائیڈ شیئرنگ سروس کے پارٹنر ڈرائیور کے ذریعے آرڈرز کی گھروں تک ڈیلیوری کو ممکن بنا رہی ہے۔

بیان میں مزید کہا گیا کہ اس اقدام سے موجودہ صورتحال میں معاشی طور پر پریشان ڈرائیورز کو آمدنی کے حصول کا بھی موقع مل سکے گا۔

 کمپنی کی جانب سے ان ڈرائیورز کے تحفظ کے حوالے سے حفاظتی اور صفائی کے اقدامات کو یقینی بنایا جائے گا اور مقامی انتظامیہ کی جاری کردہ ہدایات کے مطابق حفاظتی اقدامات کئے جائیں گے جبکہ ڈیلیوری سروس کی دستیابی بھی انتظامیہ کی اجازت پر ہی منحصر ہوگی۔

اوبر پاکستان کے جنرل منیجر نے کہا ہے کہ اس مشکل وقت میں بنیادی ضروریات کی اشیا گھروں تک پہنچانے کیلئے اوبر ڈیلیوری کا آپشن ایپ میں دیا جا رہا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ کمپنی اپنی سروسز سے مشکل کی اس گھڑی میں لوگوں کو سہولت فراہم کرنا چاہتے ہیں اور وائرس کی روک تھام کیلئے حوالے سے اپنے حصہ کا کردار بھی ادا کرنا چاہتے ہیں۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here