وزیرخارجہ کا ترقی پذیر ملکوں کے لیے قرضوں میں ریلیف دینے کا مطالبہ، اٹلی سے اظہارِ یکجہتی

156

لاہور: دنیا بھر میں کورونا وائرس کی وبا کے دوران وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے ایک بار پھر وزیراعظم عمران خان کے ترقی پذیر ملکوں کو قرضو ں میں رعایت دینے اور بحالی کے عمل میں مدد کے مطالبے کو دہرایا ہے تاکہ وہ زندگیاں بچانے کے لیے اپنے وسائل استعمال کر سکیں اور اپنی معیشت کو بچا سکیں۔

انہوں نے اطالوی ہم منصب لوئیجی ڈی مایو سے ٹیلی فون پر بات کرتے ہوئے اٹلی کے ساتھ اپنی غیرمعمولی یکجہتی کا اظہار کیا جہاں اموات کی تعداد 8000 سے تجاوز کر چکی ہے۔ وزیر خارجہ نے اٹلی کے ہیلتھ کیئر پرووائیڈرز کی جرات اور بہادری کو سراہا اور اس مشکل وقت میں پاکستان کی جانب سے غیرمعمولی یکجہتی کا یقین دلایا۔

مزید پڑھیں:

کورونا وائرس: ورلڈ بنک اور آئی ایم ایف کا آئی ڈی اے رکن ممالک سے قرض واپسی موخر کرنے پراتفاق

کورونا وائرس سے ترقی پذیر معیشتیں تباہ ہو سکتی ہیں، دنیا قرضے معاف کرنے پر غور کرے 

وزیر اعظم کی عالمی معاشی اداروں سے قرضوں کی معافی کے مطالبے کی پذیرائی

کورونا وائرس سے نمٹنے کیلئے سارک ممالک کے ایمرجنسی فنڈ کی تجویز

انہوں نے اس امید کا اظہار کیا کہ اٹلی جو یورپی یونین، جی 7 اور جی 20 ممالک کا ایک اہم رُکن ہے، اس معاملے پر سمٹ میں آواز بلند کرے گا۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here