2020 عالمی بحران ، 2021 بحالی کا سال ہو گا: آئی ایم ایف

223

واشنگٹن:عالمی مالیاتی ادارے انٹرنیشنل مانیٹری فنڈ (آئی ایم ایف) نے کہا ہے کہ 2020 میں کورونا وائرس کی وبا عالمی بحران کا باعث بنے گی جو 2009-2008  کے عالمی مالی بحران سے زیادہ شدید نوعیت کا ہو سکتا ہے لیکن عالمی معاشی حالات 2021 میں بہتر ہونا شروع ہو جائیں گے۔

مزید پڑھیں: آئی ایم ایف کورونا وائرس سے متاثرہ کاروباروں کو ٹیکس ریلیف دینے پر متفق

آئی ایم ایف کی مینجنگ ڈائریکٹر کرسٹالینا جارجیوا نے متعدد ملکوں کی جانب سے صحت کے نظام کو بہتر بنانے کے علاوہ متاثرہ کمپنیوں اور ورکرز کے تحفظ کے لیے پہلے ہی کیے جا چکے غیر معمولی مالی اقدامات اور مرکزی بنکوں کی جانب سے مانیٹری پالیسی آسان کرنے کے عمل کو خوش آئند قرار دیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس کے باوجود بالخصوص معاشی محاذ پر مزید اقدامات کرنے کی ضرورت ہو گی۔

مزید پڑھیں: آئی ایم ایف کا کورونا وائرس کا مقابلہ کرنے کے لیے 50 ارب ڈالر فراہم کرنے کا اعلان

آئی ایم ایف کی منیجنگ ڈائریکٹر نے مزید کہا کہ آئی ایم ایف ہنگامی فنانس میں بڑے پیمانے پر اضافہ کرے گا کیوں کہ 80 ملک مدد کی درخواست کرچکے ہیں۔ عالمی مالیاتی ادارہ ایک ٹریلین ڈالر کا پورا فنڈ قرض کے طور پر دینے کے لیے تیار ہے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here