’کورونا وائرس کی ویکسین ابتدائی مراحل میں ،تباہ کاریاں جولائی اگست تک جاری رہ سکتی ہیں‘

امریکا کی 49 ریاستوں میں کورونا وائرس کے 4556 کیسز سامنے آ چکے ہلاکتوں کی تعداد 85ہو چکی،سب سے زیادہ اموات واشنگٹن میں ہوئی ہیں

168

واشنگٹن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کی روک تھام کے لیے تیار کی جانے والی ویکسین ابھی ابتدائی مراحل میں ہے، اس حوالے سے ہونے والے تجربات کے نتائج جلد ہی سامنے آئیں گے۔

وائٹ ہائوس میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے صدر ٹرمپ نے کہا کہ رواں سال اگست تک کورونا وائرس سے چھٹکارا حاصل کرنے میں کامیاب ہو جائیں گے۔

 ان کا کہنا تھا کہ کورونا کی تباہ کاریاں جولائی یا اگست تک جاری رہ سکتی ہیں، ہم اس وائرس کے پھیلاؤ پر قابو پانے کی پوری کوشش کرر ہے ہیں، ان تمام ممالک کے ساتھ سرحدیں بند کردیں گے ۔

یہ بھی پڑھیے:

’کورونا وائرس سے ترقی پذیر معیشتیں تباہ ہو سکتی ہیں، دنیا قرضے معاف کرنے پر غور کرے‘

کورونا وائرس، پاکستان میں مجموعی تعداد 195 ہو گئی، پی ایس ایل ملتوی

کورونا وائرس، امریکا کے ہنگامی اقدامات، 50 ارب ڈالر کی منظوری، تیل ذخیرہ کرنے کی ہدایت

انہوں نے کہا کہ کورونا کے خلاف ہمارے اقدامات ضروری ہیں اور اگر ضروری ہوا تو ہم ان میں تبدیلی کریں گے۔امریکہ کورونا وبا سے نمٹنے کے لیے عارضی ہسپتالوں کی تعمیر کا ارادہ رکھتا ہے۔

واضح رہے کہ امریکا کی 49 ریاستوں میں کورونا وائرس کے 4556 کیسز سامنے آ چکے ہیں جبکہ ہلاکتوں کی تعداد 85ہو چکی ہے، سب سے زیادہ 48 ہلاکتیں واشنگٹن میں ہوئی ہیں۔

دوران پریس کانفرنس امریکی صدر سے جب سوال کیا گیا کہ بیمار افراد کے لیے عارضی ہسپتالوں کی تعمیر کے لیے فوجی مدد کی ضرورت ہوگی تو انہوں نے کہا کہ ہاں ہم اس کا ارادہ رکھتے ہیں۔

صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے نے کورونا کا مقابلہ کرنے میں مدد کے لیے نئی ہدایات جاری کرتے ہوئے عوام پر زور دیا کہ وہ سماجی پروگراموں میں شرکت سے گریز کریں اور کسی بھی جگہ پر10 افراد جمع نہ ہوں۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here