’ڈیٹا فار پاکستان پورٹل‘ کا اجراء، معلوم ہوسکے گا فنڈز کی ضرورت کس علاقے میں ہے، وزیر اعظم عمران خان

عالمی بینک کے تعاون سے بنائے گئے ’ڈیٹا فار پاکستان پورٹل‘ پر 2004ءسے 2018ء تک کا ترقیاتی شرح کا ضلعی ڈیٹا موجود، ہر شہری کو رسائی ہو گی

143

اسلام آباد : حکومت نے ڈیٹا فار پاکستان پورٹل کا اجراء کردیا، پورٹل کے اجراء کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ حکومت غربت کے خاتمے کےلئے پرعزم ہے، اس مقصد کے لئے اعداد و شمار کو مرتب کرنا اہمیت کا حامل ہے، ڈیٹا فار پاکستان کے ذریعے معلوم ہوگا کہ کہاں فنڈز خرچ کرنے کی ضرورت ہے، فیصلہ سازی اور فنڈز مختص کرنے میں یہ اعداد و شمار معاون ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت غربت کے خاتمے کےلئے پرعزم ہے، اس مقصد کے لئے اعداد و شمار کو مرتب کرنا اہمیت کا حامل ہے، مہذب معاشرے کی پہچان غریب افرا دکے رہن سہن سے ہوتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:’2020ء نوکریاں دینے کا سال‘ وزیر اعظم عمران خان کا یہ بیان کتنا حقیقت پر مبنی ہے؟

وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ بدقسمتی سے عوام پر پیسہ خرچ کرتے وقت زمینی حقائق کو مدنظر نہیں رکھا جاتا تھا اور ماضی میں پنجاب کے بجٹ کا بڑا حصہ صرف لاہور پر خرچ کیا گیا، کسی ایک علاقے پر فنڈز خرچ کرنے سے دوسرے علاقے ترقی سے محروم رہ جاتے ہیں۔

عمران خان نے کہا کہ ڈیٹا فار پاکستان کے ذریعے معلوم ہوگا کہ کہاں فنڈز خرچ کرنے کی ضرورت ہے، ڈیٹا فار پاکستان کی ملک کو بہت ضرورت تھی، فیصلہ سازی اور فنڈز مختص کرنے میں یہ اعداد و شمار معاون ہوں گے۔

 انہوں نے کہا کہ ان اعداد و شمار کے تحت صوبائی مالیاتی ایوارڈ میں آسانی ہو گی، کمزور طبقے کی خوشحالی سے ہی ملک ترقی کرے گا۔

یہ بھی پڑھیں:خواتین کو گھر چلانے کیلئے ایک گائے ،ایک بھینس اور تین بکریاں دیں گے

 قبل ازیں تقریب سے وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے سماجی تحفظ و تخفیف غربت ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ویب پورٹل تک ہر شہری کو رسائی ہو گی، پورٹل پر جاری کیا جانے والا ڈیٹا مختلف سروے سے اکٹھا کیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پورٹل پر جغرافیہ، صحت، تعلیم اور روزگار سے متعلق معلوماتی مواد موجود ہے، پورٹل وفاقی، صوبائی اور ضلعی سطح پر اداروں کی فیصلہ سازی میں اہم کردار ادا کرے گا، پورٹل کے تحت اعداد و شمار کے موازنے کی بھی سہولت ہے۔

پورٹل میں 2004ءسے 2018ءتک کا ترقیاتی شرح کا ضلعی ڈیٹا شامل ہے، ڈیٹا فار پاکستان پورٹل کو عالمی بینک کے تعاون سے تشکیل دیا گیا ہے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here