وزارت ریلوے کامزید  9ٹرینیں پرائیویٹ سیکٹر کو دینے کا فیصلہ

فری ٹریک پالیسی کے تحت کوئی بھی نجی فرم کرایہ پر ٹرین چلاسکتی ہے ،فنڈز ملے تو 6ماہ میں کراچی سرکلر ریلوے چلا دیں گے: شیخ رشید احمد کی پریس کانفرس

137

لاہور: وفاقی وزیر شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ مزید 9ٹرینیں پرائیویٹ سیکٹر کو دینے کا فیصلہ کیا ہے جبکہ تین مال بردار گاڑیاں پہلے ہی نجی شعبہ کو دے چکے ہیں ۔فری ٹریک پالیسی کے تحت کوئی بھی نجی فرم کرایہ پر ٹرین چلاسکتی ہے ،فنڈز ملے تو 6ماہ میں کراچی سرکلر ریلوے چلا دیں گے

انہوں نے کہا کہ ریلوے میں ایک سے پانچ گریڈ تک بھرتی کےلئے ریکروٹمنٹ پالیسی منظوری کے لیے کابینہ کو ارسال کی جا چکی ہے جس کے تحت ریلوے میں 10 ہزار ملازمین بھرتی کئے جارہے ہیں۔

ہفتہ کے روز ریلوے ہیڈکوارٹرز میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے شیخ رشید احمد نے کہا کہ گزشتہ سال کی نسبت اس سال ریلوے کو تین ارب روپے کی زائد آمدن ہوئی ہے،  72سالوں  میں پہلی دفعہ ریلوے کا بزنس پلان دیا ہے،فری ٹریک پالیسی،انٹر ٹینمنٹ،فوڈ پالیسی متعارف کروائی گئی۔

یہ بھی پڑھیے:شیخ رشید نے 2020ء کو ریلوے کی ترقی کا سال قرار دے دیا

انہوں نے کہا کہ ایم ایل وَن اور نالہ لئی میری زندگی کا مشن ہے، ایم ایل ون کی تکمیل کے بعد لاہور تاکراچی کا سفر 7گھنٹے کا رہ جائے گا۔

وفاقی وزیر نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ رائیونڈ اور جلو شٹل ٹرینوں کو آمدنی کم ہونے کی وجہ سے بند کیا گیا۔ ہماری لڑائی ٹرک ،روڈ اور ٹریفک مافیا سے ہے،72سالوں میں ایک پیسہ بھی ٹریک پر نہیں لگایا گیاجو پیسے سڑکوں اور شاہرائوں پر لگائے گئے اگر ریلوے ٹریک پر لگتے تو اربوں روپے کی بچت ہوتی اور ریلوے کی حالت بھی بہت بہتر ہوتی۔

یہ بھی پڑھیے:9 ماہ میں 11 مسافر اور 4 مال بردار ٹرینیں متعارف کروائی گئیں

ایک سوال پر وفاقی وزیر نے کہا کہ اگر فنانس اور پلاننگ نے ریلوے کو فنڈز دیئے تو 6ماہ میں کے سی آر کو چلا دیں گے۔

ایک اور سوال پر انہوں نے کہا کہ ریلوے کی فری ٹریک پالیسی کے تحت کوئی بھی نجی فرم ٹرین چلاسکتی ہے جبکہ ریلوے ٹریک کا کرایہ وصول کرے گا۔

’پنجاب مردوں کاصوبہ ہے‘

سیاسی مخالفین پر تنقید کے نشتر چلاتے ہوئے شیخ رشید احمد کا کہنا تھا کہ پاکستان پیپلز پارٹی کی پنجاب میں دال نہیں گل سکتی یہ مردوں کا صوبہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کو سلیکٹڈ کہنے والے بلاول بھٹو خود بھی قمرالزمان کائرہ ،مولا بخش چانڈیو ،لطیف کھوسہ،اعتزاز احسن ،رضا ربانی کے ہوتے ہوئے سلیکٹڈ ہیں۔

یہ بھی پڑھیے:شیخ رشید پاکستان ریلوے میں نجی سرمایہ کاری کے لیے پرعزم

وزیر ریلوے نے کہا کہ شہباز شریف کا سلوگن ’میری بیماری میری مرضی ‘ہے،اس وقت نواز شریف اور شہباز شریف کو سیاسی میدان میں ہوناچاہئے تھالیکن وہ بھاگ گئے۔

شیخ رشید کا کہنا تھا کہ ایم کیوایم اور مسلم لیگ (ق) حکومت کے ساتھ ہیں کوئی ان ہائوس تبدیلی نہیں آرہی،عمران خان اسی ماہ آٹا چینی مافیا کو بے نقاب کرکے شکنجے میں لائیں گے۔

انہوں نے کہاکہ شاہد خاقان عباسی اس وقت بہت باتیں کررہے ہیں جلد ایل این جی کیس کا فیصلہ آئے گا تو سب کچھ کھل جائے گا۔

وفاقی وزیر ریلوے نے کہا کہ نیب آرڈیننس پیپلز پارٹی اور پی ٹی آئی مل کر بنارہی ہیں لیکن میرے نزدیک نیب کا شکنجہ مضبوط ہونا چاہئے اور اس کو اچھے وکلاءکی ضرورت ہے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here