بارشوں سےپنجاب میں  گندم کی فصل متاثر، پیداوار 25.2 ملین ٹن رہنے کی توقع

217

لاہور: غیر موزوں موسمی حالات اور حالیہ طوفانی بارشوں کے باعث پنجاب میں 40 ہزار ایکڑ پر گندم کی فصل متاثر ہونے کا خدشہ ہے۔

غیرموزوں موسمی حالات اور زرعی مداخل کی بروقت فراہمی کے نتیجہ میں رواں سال پاکستان کی گندم کی پیداوار 25.2 ملین ٹن رہنے کی توقع ہے۔

یہ بھی پڑھیں:اقتصادی رابطہ کمیٹی کا 8.25 ملین ٹن گندم خریدنے کا فیصلہ

اقوام متحدہ کے ادارہ برائے خوراک و زراعت (ایف اے او)نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ ٹڈی دل کے حالیہ حملوں کے باعث سندھ اور پنجاب میں زیادہ گندم پیدا کرنے والے علاقوں میں پیداوار میں کمی کا خدشہ ہے۔

رواں سال کے ربیع سیزن کیلئے حکومت نے گندم کا 27.03 ملین ٹن کا ہدف مقرر کیا ہے تاہم ایف اے او کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پاکستان میں گندم کی پیداوار ہدف سے کم یعنی 25.2 ملین ٹن رہنے کی توقع ہے۔

گزشتہ سال ناموزوں موسمی حالات کے باعث پاکستان میں 1.5 ملین ٹن گندم کی پیداوار ضائع ہو گئی تھی۔

یہ بھی پڑھیں:رواں سال گندم کی سرکاری قیمت 1400 روپے فن من مقرر کی جائے گی: سیکریٹری خوراک

زرعی ماہر نوید عصمت کہتے ہیں کہ تیز اور مسلسل بارشوں اور ہوا میں نمی کے زیادہ تناسب کے باعث گندم کی فصل خراب ہو سکتی ہے۔ کسانوں کو ضروری اقدامات کی ہدایت کی ہے۔

واضح رہے کہ رواں سال کے آغاز میں پاکستان کے کئی شہروں میں آٹے کے بحران نے سر اٹھا لیا تھا ، آٹے کی قیمت 70 روپے فی کلو گرام ہونے پر جنوری میں اقتصادی رابطہ کمیٹی نے 3 لاکھ میٹرک ٹن گندم درآمد کرنے کی منظوری دی تھی جو مارچ کے آخر میں پاکستان پہنچے گی۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here