فیس بک نے انتخابات پر اثر انداز ہونے والی اسرائیلی کمپنی پر پابندی لگا دی

62

نیویارک: فیس بک نے کہا ہے کہ اس نے متعدد ممالک میں انتخابات پر اثر انداز ہونے والی اسرائیلی کمپنی پر پابندی عائد کردی اور جھوٹی خبریں پھیلانے والے درجنوں اکاؤنٹ اور پیجز کو منسوخ کردیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق فیس بک کے سائبر سیکیورٹی پالیسی کے سربراہ نیتھینیئل گلائیچر نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ فیس بک نے 65 اسرائیلی اکاؤنٹ، 161 پیجز، درجنوں گروپس اور 4 انسٹاگرام اکاؤنٹس کو بند کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ یہ تمام اکاؤنٹس اور پیجز تل ابیب میں مقیم سیاسی مشاورتی اور لابی کرنے والے ادارے ʼآرکمیڈز گروپʼ سے منسلک تھے جو اپنی سوشل میڈیا مہارت اور قابلیت کے ذریعے مختلف ممالک میں حقائق کو تبدیل کرکے پیش کرتے تھے.

اپنی ویب سائٹ پر آرکمیڈز خود کو صدارتی انتخاب کی مہم کے لیے مشاورت کرنے والا ادارہ ظاہر کرتا ہے۔

فیس بک کے عہدیدار کا کہنا تھا کہ آرکمیڈز گروپ 2012ء میں شروع ہوا اور اس نے جعلی اشتہارات پر 8 لاکھ ڈالر خرچ کیے.

ان کا کہنا تھا کہ فیس بک، آرکمیڈز گروپ کے مقاصد کے بارے میں نہیں جان سکا جو یا تو کمرشل یا پھر سیاسی ہوسکتے ہیں تاہم فیس بک کو سیاسی امیدواروں، مخالفین اور مقامی نیوز اداروں کا نام ظاہر کرتے ہوئے منظم غیر اخلاقی حرکات کے بارے میں معلوم ہوا تھا جو فرضی معلومات پھیلا رہے تھے۔

فیس بک پر اس کمپنی کے اہم اہداف سب سہارا افریقی خطے کے ممالک تھے، تاہم جنوب مشرقی ایشیا اور لاطینی امریکا کے چند ممالک بھی اس کے نشانے پر تھے۔

واضح رہے کہ 2016ء میں امریکا کے صدارتی انتخاب کے دوران روس کی جانب سے عوامی رائے کو تبدیل کرنے کے لیے فیس بک کے استعمال کے انکشاف کے بعد سوشل میڈیا ویب سائٹ پر جعلی خبروں سے نمٹنے کے لیے دباؤ میں اضافہ ہوا ہے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here