پاکستان اور چین کا آئی ٹی، ٹیکسٹائل اور زراعت کے شعبے میں سرمایہ کاری کیلئے تعاون بڑھانے پر اتفاق

بیرونی سرمایہ کاروں کی سہولت کے لئے اصلاحات متعارف کرائی ہیں، 2020ء تک 100 عالمی معیشتوں میں ہونا ہمارا ہدف ہے: چیئرمین سرمایہ کاری بوڑد ہارون شریف

125

اسلام آباد: پاکستان اور چین نے انفارمیشن ٹیکنالوجی، ٹیکسٹائل اور زراعت کے شعبے میں سرمایہ کاری کے فروغ کو یقینی بنانے کے لئے دو طرفہ تعاون بڑھانے پر اتفاق کیا ہے.

یہ اتفاق چیئرمین سرمایہ کاری بورڈ ہارون شریف سے چین کی انویسٹمنٹ پروموشن ایجنسی (CIPA) کے ڈائریکٹر جنرل لوڈیان ژن نے بیجنگ میں ملاقات کے دوران کیا گیا.

اس موقع پر چیئرمین سرمایہ کاری بورڈ نے سی آئی پی اے کے ساتھ سرمایہ کاری بورڈ کی مفاہمت کی یادداشت کی بحالی پر تبادلہ خیال کیا اور فریقین نے ترجیحی شعبہ جات بشمول انفارمیشن ٹیکنالوجی، ٹیکسٹائل اور زراعت پر مصنوعات کی تیاری وغیرہ میں سرمایہ کاری کے فروغ کو یقینی بنانے کے لئے دو طرفہ تعاون کے اضافے پر اتفاق کیا۔

ہارون شریف نے کہا کہ سرمایہ کاری بورڈ پاکستان میں سرمایہ کاری کیلئے چینی سرمایہ کاروں‌ کی حوصلہ افزائی کرتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ بورڈ موجودہ 7 مخصوص اقتصادی زونز کے علاوہ سی پیک کے تحت مزید خصوصی اقتصادی زونز کے قیام کی منصوبہ بندی کر رہا ہے۔ رشکئی سپیشل اقتصادی زون کی ترقی اس حوالے سے اہم سنگ میل ثابت ہو گی جس سے سی پیک کے تحت صنعتی تعاون پر عملدرآمد کو یقینی بنانے کے پہلے ہدف کی جانب پیش قدمی کی جائے گی۔

چیئرمین سرمایہ کاری بوڑد کا کہنا تھا کہ دو طرفہ صنعتی تعاون موجودہ حکومت کی اولین ترجیح ہے جس کے تحت مخصوص اقتصادی زونز پر عملدرآمد کو رواں سال یقینی بنایا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ سرمایہ کاری بورڈ کو مقامی اور غیر ملکی سرمایہ کاروں کو سرمایہ کاری کی تجاویز موصول ہوئی ہیں جو پاکستان کے ترجیحی شعبوں میں سرمایہ کاری پر دلچسپی رکھتے ہیں تاکہ زراعت پر مبنی فوڈ اینڈ بیوریج کی صنعت، ویلیو ایڈڈ ٹیکسٹائل، سیاحت و میزبانی، آئی ٹی، لائٹ انجینئرنگ اور لاجسٹکس کے شعبوں میں سرمایہ کاری کی استعداد سے فائدہ حاصل کیا جاسکے۔

ہارون شریف نے بتایا کہ پاکستان نے ملک میں غیر ملکی سرمایہ کاروں کی سہولیات کے عمل کو مزید آسان بنانے کے لئے اصلاحات متعارف کرائی ہیں. 2020ء تک ہم کاروباری آسانیاں پیدا کرکے دنیا کی 100 بڑی معیشتوں میں شامل ہونے کا عزم رکھتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ سرمایہ کاری بورڈ نے سرمایہ کاروں کو پاکستان میں اپنے منصوبہ جات کے لئے معاونت فراہم کرنے کے حوالے سے ایک خصوصی یونٹ قائم کیا ہے جہاں پر سرمایہ کاروں کو ہر طرح کی معاونت فراہم کرنے کے لئے شفافیت، بروقت اور موثر اقدامات کئے جاتے ہیں۔

واضح رہے کہ سرمایہ کاری بور ڈ کے چیئرمین وزیراعظم عمران خان کے ساتھ چین کے دورہ پر ہیں جہاں وزیر اعظم بیجنگ میں منعقدہ دوسری بیلٹ اینڈ روڈ فورم میں شرکت کررہے ہیں۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here