چین کے تعاون سے گوادر تیزی سے دنیا کا تجارتی مرکزبن رہا ہے، وزیراعظم عمران خان

239

بیجنگ: وزیراعظم نے چین کے میگا منصوبے کے ثمرات عوام تک پہنچانے کیلئے5 نکات پیش کردیے
تفصیلات کے مطابق دوسرے ون بیلٹ اینڈ روڈ فورم 2019 کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ عالمی رہنماؤں کی موجودگی امید کو مایوسیوں پر ترجیح کی علامت ہے۔
وزیراعظم نے کہا کہ ون بیلٹ اینڈ روڈ منصوبے کا خواب حقیقت کا روپ دھار رہا ہے، پاکستان کو فخر ہے کہ وہ اس منصوبے کا حصہ ہے۔
انہوں نے کہا کہ پاکستان اورچین سی پیک کے اگلے فیز کی طرف بڑھ رہے ہیں، سی پیک کے اگلے فیز میں اسپیشل اکنامک زونزکا قیام ہوگا۔
وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ بیلٹ اینڈ روڈ منصوبے سے پاکستان میں توانائی بحران میں کمی ہوئی، چین کے تعاون سے گوادر تیزی سے دنیا کا تجارتی مرکزبن رہا ہے۔
وزیراعظم پاکستان نے کہا کہ چین سے زراعت، صحت اور تعلیم میں تعاون کا فروغ چاہتے ہیں، بنیادی ڈھانچے، ریلوے، آئی ٹی اورتوانائی کے شعبے میں تعاون بڑھانا چاہتے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ وائٹ کالر کرائم نے ترقی پذیرممالک پر منفی اثرات مرتب کیے، پاکستان وائٹ کالرکرائم کے خاتمے کے لیے بھر پور اقدامات کررہا ہے۔
انہوں نے کہا کہ ماحولیاتی تعمیرات کے منفی اثرات سے بچنے کے لیے اقدامات ناگزیر ہیں، ماحول کی بہتری کے لیے 10 ارب درخت لگانے کے منصوبے کا آغاز کیا ہے۔
وزیراعظم عمران خان نے بتایا کہ غربت کے خاتمےکے لیے پاکستان میں ‘احساس’ کے نام سے ایک پروگرام شروع کیا گیا ہے اور ماحول کی بہتری کے لیے دس ارب درخت لگانے کے منصوبے کا بھی آغاز ہوچکا ہے۔
عمران خان نے کہا کہ پاکستان اور چین کے درمیان آزاد تجارت کا معاہدہ اہمیت کا حامل ہوگا، بیلٹ اینڈ روڈ سیاحتی کلچر کو فروغ دینے کے لیے بھی اہم ہے۔
اس دوران وزیر اعظم نے شرکاء کو پاکستان میں سرمایہ کاری کی دعوت دیتے ہوئے کہا کہ اقتصادی ترقی کے لیے نجی شعبے کی حوصلہ افزائی کر رہے ہیں اور پاکستان غیر ملکی سرمایہ کاروں کو پُرکشش مواقع فراہم کر رہا ہے۔
وزیراعظم عمران خان کا مزید کہنا تھا کہ پُرامن اور ترقی یافتہ دنیا کے لیے ہماری کوششیں جاری ہیں اور اس مقصد کے لیے پاکستان خطے میں امن و استحکام کے لے بھر پور کوششیں کر رہا ہے۔
وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ دوسرے بیلٹ اینڈ روڈ فورم سے خطاب کرنا میرے لیے اعزاز کی بات ہے کیونکہ فورم باہمی رابطوں اور شراکت داری کا اہم ذریعہ ہے اور پاکستان کی غیر مشروط حمایت پر چین کی قیادت کا شکرگزار ہوں۔
مزید پڑھیں: ترقی کے لیے بین الاقوامی تعاون کو فروغ دینا چاہتے ہیں، چینی صدر
اس سے قبل چینی صدر نے دوسرے ون بیلٹ اینڈ روڈ فورم 2019 کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ تجارت کے فروغ کے لیے آزاد تجارتی معاہدوں کی ضرورت ہے، بیلٹ اینڈ روڈ فورم تمام شریک ملکوں کو یکساں موقع فراہم کرتا ہے۔
یہ بھی پڑھیں: دورۂ چین: وزیراعظم عمران خان کی ورلڈ بینک کی سی ای او سے ملاقات

1 COMMENT

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here