پاکستان سے قرض کا فوری طور پر مطالبہ نہیں کریں گے، چینی سفیر

238

اسلام آباد: پاکستان میں تعینات چین کے سفیر یاؤ جینگ کہتے ہیں کہ چین کا قرض پاکستان نے فوری طور پر ادا نہیں کرنا اور نہ ہم فوری طور پر مطالبہ کریں گے۔
میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے چینی سفیر یاؤ جینگ نے کہا کہ پاکستان ہمارا دوست ہے اور ہم اس کےلیے کسی قسم کی مشکلات پیدا کرنا نہیں چاہتے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر خزانہ اسد عمر سے آئی ایم ایف پیکچ کے بارے میں معلومات لی، مجھے یقین ہے کہ وہ قرض کے حوالے سے سوال کرتے ہوں گے۔
چینی سفیر نے کہا کہ سی پیک میں تمام ممالک کو خوش آمدید کہتے ہیں کیونکہ یہ کسی ایک ملک کا منصوبہ نہیں، مجھے یقین ہے کہ بھارت سمیت تمام ممالک سی پیک کے معاملے کو سمجھ پائیں گے، سی پیک مکمل طور ایک معاشی منصوبہ ہے اسٹریجیک نہیں۔
چینی سفیر سے زبردستی پاکستانی لڑکیوں کی چینی لڑکوں سے شادیوں پر سوال بھی کیا گیا۔ یاؤ جینگ نے کہا کہ یہ شادیاں رضا مندی سے ہوتی ہے، شادی یقین اور محبت کا رشتہ ہے تاہم اس میں کچھ غیر قانونی ایجنٹس بھی شامل ہیں جو چین پاکستان کے تعلقات کو خراب کرنا چاہتے ہیں، جو اس قسم کی شادیوں کا انتظام کرتے ہیں، جو ہمارے قوانین کے بھی خلاف ہے۔
سکیانگ میں غیر قانونی ٹرینگ سینٹرز کے حوالے سے سوال پر چینی سفیر نے کہا کہ یہ تربیتی مراکز ہیں جہاں پر لوگوں کو ’’ووکیشنل ٹریننگ‘‘ دی جاتی ہے، کمیونٹی کو با اختیار بنانے کےلیے ایسی تربیتی مراکز بنائے جاتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس حوالے سے غلط افواہیں پھیلائی جاتی ہیں، اس قسم کے مراکز پورے چین میں ہیں۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here