پاکستان اسٹیل ملز کی نجکاری یا بحالی، مارچ کے آخر میں فیصلہ

114

اسلام آباد: پاکستان اسٹیل ملز کی نجکاری یا بحالی کے سلسلے میں حتمی فیصلہ مارچ کے آخر میں کیا جائے گا۔
قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے صنعت و پیداوار کے اجلاس میں بتایا گیا ہے کہ پاکستان اسٹیل ملز کے باعث اب تک قومی خزانے کو 198ارب روپے کا خسارہ ہو چکا ہے تاہم پاکستان اسٹیل ملز کی بحالی کے آپشنز کو وزارت صنعت و پید اوار مارچ کے آخر میں وزیر اعظم کے سامنے پیش کرے گی جس کے بعد پاکستان اسٹیل ملز کی نجکاری یا بحالی کے سلسلے میں حتمی فیصلہ کیا جائے گا۔
اجلاس چیئرمین ساجد حسین طوری کی زیرصدارت پارلیمنٹ ہاؤس میں منعقد ہوا۔ اجلاس میں سیکریٹری صنعت و پید اوار کی جانب سے بتایا گیا کہ پاکستان اسٹیل مل کے باعث اب تک 198 ارب کا خسارہ ہوا،اسٹیل ملز کی بحالی یا دیگر آپشنز پر کام جاری ہے، مارچ کے آخر میں وزیر اعظم کو اسٹیل ملز بحالی کے مختلف پلان پیش کریں گے۔
اجلاس میں یوٹیلیٹی اسٹورز کارپوریشن کو درپیش مسائل بھی زیر بحث لائے گئے ،چیئرمین کمیٹی نے سوال کیا کہ کیا کا رپوریشن کی جانب سے 700 یوٹیلیٹی اسٹورز بند کیے جا رہے ہیں؟رکن کمیٹی ریاض الحق نے کہاکہ اسٹوربند ہونا بہت بڑا ظلم ہو گا۔
ایم ڈی یوٹیلیٹی اسٹورز کارپوریشن مشتاق احمد نے بتایا کہ ابھی کوئی اسٹور بند نہیں کیاگیا ،1500 اسٹور لاکھ روپے سے کم کما رہے ہیں، 2013 کے بعد سے حکومت نے سبسڈی نہیں دی،جس کے باعث مسائل کا سامنا ہے۔

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here